علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے زیر اہتمام "بچوں کی ابتدائی تعلیم و تربیت اور نگہداشت"کے موضوع پر دوسری قومی کانفرنس 2 مئی کو منعقد ہوگی

ضرورت اس امر کی ہے کہ بچوں کو پیدائش سے جوانی تک ایک مضبوط بنیاد فراہم کی جائے،وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر شاہد صدیقی

اتوار اپریل 11:00

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 اپریل2018ء) علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی میں فیکلٹی آف ایجوکیشن کے زیر اہتمام "بچوں کی ابتدائی تعلیم و تربیت اور نگہداشت"کے موضوع پر دوسری قومی کانفرنس 2 مئی کو منعقد ہورہی ہے جس میں بچوں کی ابتدائی دیکھ بھال، نشوونما اور تعلیم و تربیت کے موجودہ طریقہ کار کا عصر حاضر کے تقاضوں کے مطابق جائزہ لیا جائے گا اور بہتر مستقبل کے لئے نئے راستوں کا تعین کیا جائے گا۔

کانفرنس کا مق-صد ماہرین کے تجربات اور مشاہدات سے استفادہ حاصل کرنا اور بچوں کی بہترین پرورش کے تازہ ترین رجحانات اور چیلنجز کی تشخیص ہے۔یونیورسٹی کی جانب سے جاری بیان کے مطابق کانفرنس میں ملک بھر سے سٹیک ہولڈرز ، محققین ، ٹیچرز، ایجوکیٹرز،کمیونٹی لیڈرز، ماہرین صحت ، ماہرین نفسیات ، زبانوں کے ماہرین اور والدین شرکت کریں گے۔

(جاری ہے)

سکالرزولادت سے قبل اور پیدائش کے بعد بچے اور ماں کی عذائیت، بچے کی ابتدائی پرورش اور مستقبل کے تعین پر مقالے پیش کریں گے۔

کانفرنس کی تیاروں کا جائزہ لیتے ہوئے وائس چانسلرپروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے کہا کہ یونیورسٹی معاشرتی مسائل کا قابل عمل حل تلاش کرنے کیکوشش کر رہی ہے اور یہ کانفرنس اُس سلسلے کی کڑی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج کے بچے کل معاشرے کی باگ دوڑ سنبھال لیں گے، اس لئے ارلی چائلڈ کیئر اینڈ ایجوکیشن کے موضوع پر کانفرنس منعقد کرنے کی ضرورت محسوس ہورہی تھی۔

ڈاکٹر شاہد صدیقی نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ پیدائش سے جوانی تک کے عرصے میں اسے ایک مضبوط بنیاد فراہم کی جائے ۔ اس مقصد کے لئے یونیورسٹی وزارت تعلیم کے تعاون سے "بچوں کی ابتدائی دیکھ بھال اور تعلیم "کا مرکز قائم کرنے کی منصوبہ بندی بھی کررہی ہے۔انہوں نے کہا کہ قومی تعمیر اور بہتر مستقبل کے لئے اوپن یونیورسٹی نے بچے کی ابتدائی دیکھ بھال کے موضوع پر ریسرچ کام کا آغار کردیا ہے اور ریسرچ جرنل اسی سال کے آخر میں شائع ہوجائے گا۔