لوک ورثہ میں جاری تین روزہ نوجوانو ں کے ثقافتی میلہ کی رنگا رنگ اختتامی تقریب

اتوار اپریل 18:40

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 اپریل2018ء) لوک ورثہ کے تحت منعقد کیا جانے والا تین روزہ نوجوانوں کا ثقافتی میلہ کی اختتامی تقریب میں نوجوان لوک فنکاروں نے چاروں صوبوں سمیت گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کی لوک موسیقی سے کثیر تعداد میں آئے ہوئے شائقین کو خوب محظوظ کیا۔ اس موقع پر ایک ثقافتی شو پیش کیا جائے گیاجس میں پاکستان کے مختلف علاقوں سے تعلق رکھنے والے نوجوانوں نے علاقائی رقص و موسیقی پیش کیا۔

ایگزیکٹو ڈائریکٹر لوک ورثہ محترمہ شاہیرا شاہد نے بتایا کہ اس سال لوک ورثہ اپریل میں منعقد کیا جانے والا لوک میلہ نہیں سجا سکا جو کہ اب انشا اللہ اکتوبر میں منعقد کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس تین روزہ نوجوانوں کے ثقافتی میلے کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ نوجوان نسل کو اپنی تہذیب و تمدن ، فنون ، زبان اور ثقافت سے روشناس کروایا جائے تا کہ ہماری نوجوان نسل جس نے آگے چل کر اس ملک کی باگ ڈورسنبھالنی ہے یہ اپنے اسلاف کی روایات سے واقف ہوں اور سماج میں رونما ہونے والی تیز رفتار تبدیلیوں کو اپنی تہذیب و تمدن اور اپنی روایات کے مطابق ڈھال کر اسے وقت کے ساتھ ہم آہنگ کر سکیں۔

(جاری ہے)

ثقافت کے حوالے سے ایگزیکٹو ڈائریکٹر لوک ورثہ نے مزید کہا کہ ثقافت ہماری پہچان، ہماری ترقی اور ہماری یکجہتی کا بہت بڑا ذریعہ ہے۔

متعلقہ عنوان :