رمضان میں گراں فروشی کی کسی طور پر اجازت نہیں دی جا ئیگی، حکومت نے مکمل انتظامات کر لئے ہیں، چیئرمین پرائس کنٹرول کمیٹی میاں عثمان

اتوار اپریل 19:20

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 اپریل2018ء) چیئرمین پرائس کنٹرول کمیٹی میاں عثمان نے کہا ہے کہ رمضان المبارک کے بابرکت مہینے میں گراں فروشی کی کسی طور پر اجازت نہیں دی جا ئیگی اور اس سلسلے میں حکومت نے رمضان المبارک میں گراں فروشی کو روکنے کیلئے مکمل انتظامات کر لئے ہیں اور مختلف کمیٹیوں کی تشکیل بھی کر دی ہے جو رمضان بازاروں میں گراں فروشی کو روکنے کیلئے مکمل طورپر اقدامات اٹھائیں گے انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک کے آغاز سے ایک ہفتہ قبل عوا م کی آگاہی کیلئے تشہیری مہم بھی شروع کی جائیگی ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روز ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی واضح ہدایات ہیں کہ عوام کو ہر صورت ریلیف مہیا کیا جائے ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ معمول کے دنوں میں جن علاقوں سے گراں فروشی کی زیادہ شکایات موصول ہوتی ہیں رمضان المبارک میں ان پر فوکس کریں گے اور پچھلی بار جن دکانداروں کو گراں فروشی پر جرمانے یا سزائیں ہو ئیں انہیں انتظامیہ کے لوگ صارفین کے روپ میں خود خریداری کر کے چیک کریں گے انہوںنے مزید کہا کہ شہریوں سے بھی اپیل ہے کہ وہ سرکاری نرخوں کے مطابق خریداری کریں اور جو دکاندار زائد نرخ مانگیں ان کے بارے میں فوری شکایت درج کرائی جائے تاکہ انہیں قانون کے شکنجے میں لیا جا سکے انہوں نے کہا کہ افسران کو رمضان المبارک میں گراں فروشوں کیخلاف کریک ڈائون کیلئے تیاریاں مکمل کرنے کی ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ دکاندارسرکاری نرخ نامے کو نمایاں جگہ پر آویزاں کرکے اس کے مطابق فروخت کو یقینی بنائیں ۔