ْجشن بہاراں منانے والوں کو شہداء کے خون سے غداری نہیں کرنی چاہیے ‘چھمب سیکٹر میں بھارتی فوج کی فائرنگ سے شہید ہونے والوں سے دل بہت دکھی ہے‘ لواحقین کے گھروں میں سوگ منایا جا رہا ہے اور حکمرانوں کو جشن بہاراں کی فکر ہے

سابق معاون خصوصی وزیر اعظم آزاد کشمیر چودھری محمد اشرف کی بات چیت

اتوار اپریل 20:10

میرپور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 اپریل2018ء) سابق معاون خصوصی وزیر اعظم آزاد کشمیر چودھری محمد اشرف نے کہا ہے کہ جشن بہاراں منانے والوں کو شہداء کے خون سے غداری نہیں کرنی چاہیے چھمب سیکٹر میں بھارتی فوج کی فائرنگ سے شہید ہونے والوں سے دل بہت دکھی ہے۔ لواحقین کے گھروں میں سوگ منایا جا رہا ہے اور حکمرانوں کو جشن بہاراں کی فکر ہے۔ بھارت کنٹرول لائن پر اندھا دھند بلا اشتعال فائرنگ کر کے خطہ میں خوف و ہراس پھیلانا چاہتا ہے۔

کشمیری بہادر قوم ہے جو اپنی پاک فوج کے ساتھ مضبوط چٹان کی طرح کھڑی ہے۔ہمارے حوصلے و بلند ہیں۔بھٹو ایشیاء کے عظیم لیڈر تھے۔ پاکستان کے غریب عوام کی خاطر پھانسی کے پھندے کو قبول کر لیا لیکن کسی ڈکٹیٹر کے سامنے سر نہیں جھکایا۔ بی بی شہید رانی جمہوریت کی بحالی کی خاطر اپنی جان کی قربانی دے دی۔

(جاری ہے)

ان خیالات کا اظہار انہوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔

چودھری محمد اشرف نے کہا مسئلہ کشمیر کے لیے بھٹو شہید نے ایک ہزار سال جنگ لڑنے کی بات کی تھی۔ بھٹو نے غریب عوام کو ان کا حق دیا۔ ان کے حقوق کی بات کی۔انہوں نے کہا موجودہ آزاد کشمیر کے حکمرانوں کو جشن بہاراں چھوڑ کر شہداء کے گھروں میں جا کر لواحقین کی حوصلہ افزائی اور دلجوئی کرنے جانا چاہیے۔ پاک فوج کے تمام شہداء کی جرات و بہادری کو سلام پیش کرتے ہیں جنہوں نے اپنے وطن کی خاطر جانوں کے نذرانے پیش کیے۔