کوئٹہ، دشمن ممالک کی کو ششوں کو قانون نافذ کرنے والے ادارے ناکام بنا کر امن وامان کی بحالی کے لئے کردارا دا کر رہے ہیں ،بلال احمد کاکڑ

حکومت امن وامان کی بحالی ، بیرونی اور اندرونی سر مایہ کاری کے آغاز اور ترقی کے عمل کو بہترکر کے شہریوں کو سہولیات سے مزین جدید شہر بنا رہی ہے،صوبائی مشیر اسپیشل اسسٹنٹ اطلاعات

اتوار اپریل 20:30

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 اپریل2018ء) صوبائی مشیر اسپیشل اسسٹنٹ اطلاعات بلال احمد کاکڑ نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت امن وامان کی بحالی کے علاوہ بیرونی اور اندرونی سر مایہ کاری کے آغاز کے ساتھ ساتھ صوبے میں جاری ترقی کے عمل کو بہتر طور پر آگے بڑھا تے ہوئے شہریوں کو مزید سہولیات سے مزین کر کے جدید شہر بنا رہی ہے جس کے حوالے سے کوئٹہ پیکج پر عملدرآمد کر کے ساڑھی21 ارب روپے کی لاگت سے سریاب روڈ، جوائنٹ روڈ اور سبزل روڈ کے توسیع منصوبے کے افتتاح کے بعد کام کاآغاز ہو چکا ہے یہ بات انہوں نے حکومت کی چار ماہ کی کارکردگی کے حوالے سے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ میر عبدالقدوس بزنجو نی13 جنوری کو بلوچستان کی16 ویں وزیراعلیٰ کے طو رپر حکومت سنبھالنے کے بعدکوئٹہ سمیت بلوچستان بھر میں بسنے والے لو گوں کے مسائل کے حل کے لئے ایک حکمت عملی طے کی جس میں عوام کے ساتھ بلا روک ٹوک رابطوں جس میں کھلی کچہری کے قیام کے علاوہ پبلک مقامات پر جا کر شہریوں کے مسائل سننا اور انہیں حل کرنا بغیر پروٹوکول کے جناح روڈ اور شہر کی مختلف سڑکوں کا دورہ جناح روڈ کی تعمیر ومرمت کوئٹہ کے مختلف علاقوں کو گندھے پانی سے سبزیاں کاشت کرنے کا نوٹس لیتے ہوئے ٹریٹمنٹ پلانٹ کو فعال بنا کر این ٹی ایس پاس کرنیوالے نوجوانوں کو عدالت کے فیصلے کے باوجود روزگار مل نہیں مل رہا تھا انہیں ملازمتیں فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ معذور افراد کو خصوصی کارڈ کے ذریعے وظائف دینے اور خروٹ آباد کی بچے فرح بی بی کے علاج معالجے کیساتھ ساتھ لوگوں کی درخواستوں پر عملدرآمد کرنے کے لئے اقدامات اٹھائے وزیراعلیٰ نے گوادر کا دورہ کیا اور بغیر پروٹوکول کے شہر میں جا کر عوام میں گھل ملکر ان کی مشکلات سنی اور مقامی آبادی کے حقوق کے تحفظ کے لئے قانون سازی کا اعلان کیا اور وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے سامنے اہلیان بلوچستان کے تحفظات کا اظہار کیا وزیراعلیٰ اسکیم کے تحت بلوچستان کی10 ہزار قابل نوجوانوں میں لیپ ٹاپ تقسیم کرنے کے حوالے سی28 ہزار طلباء کی فہرست میں میرٹ کی بنیاد پر اب تک 7200 لیپ ٹاپ تقسیم کئے اور باقی لیپ ٹاپس آنیوالی حکومت کے وزیراعلیٰ تقسیم کرینگے انہوں نے بتایا کہ کوئٹہ پیکج کے تحت کوئٹہ کی سڑکوں کو چوڑا کرنے اور شہر کو خوبصورت بنانے کے حوالے سے کام کاآغاز کر دیا ہے انہوں نے کہا ہے کہ میڈیا کسی بھی معاشرے کی آنکھ اورکان ہے میڈیا کا کام ہے کہ وہ حکومت کے اچھے کام کی تشہیر اور غلط کاموں کی نشا ند ہی کرے تاکہ حکومت اپنی سمت درست کر سکے حکومت نے صحافیوں کے مسائل کے حل اور فلاح وبہبود کے لئے جرنلسٹ ویلفیئر فنڈ کو30 ملین روپے سے بڑھا کر200 ملین روپے کر دیا ہے اس رقم سے حاصل شدہ منا فع صحافیوں کی فلاح وبہبود پر خرچ کیا جاتا ہے انہوں نے کہا ہے کہ پریس کلب کوئٹہ جو کہ عوامی اور سیاسی مسائل کی شنوائی کیلئے پلیٹ فارم مہیا کر تا ہے اسے جدید تقاجوں سے ہم آہنگ کرنے کے لئے معاونت فراہم کر تے ہیں جس کی سالانہ گرانٹ10 ملین سے بڑھا کر20 ملین کر دی گئی ہے اور ہاکر کی فلاح وبہبود کے لئے حکومت نے اخبارمارکیٹ کے قیام کے ساتھ ساتھ ان کے فلاح وبہبود کے لئی1100 ملین روپے کا فنڈ بھی قائم کیا ہے موجودہ حکومت نے چار ماہ کی قلیل مدت میں امن وامان کی بحالی اور ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل کو یقینی بنا کر عوام کے مسائل کو حل کرنے کے لئے کام کیا ہے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا ہے کہ انڈیا اور دیگر ہمارے دشمن ممالک حالات خراب کرنا چا ہتے ہیں لیکن قانون نافذ کرنے والے ادارے امن وامان کی بحالی کو یقینی بنانے کے لئے بھر پور کردارا دا کر رہی ہے۔