شبیر شاہ کی نظربندی کے 31سال مکمل ہونے پر سرینگر میں تقریب کا انعقاد

شبیر احمد شاہ تحریک مزاحمت کی علامت بن چکے ہیں‘ محمد عبداللہ طاری

اتوار اپریل 20:50

سرینگر ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 اپریل2018ء) مقبوضہ کشمیر میں ڈیموکریٹک فریڈم پارٹی نے کہا ہے کہ سینئرحریت رہنما اور پارٹی کے چیئرمین شبیر احمد شاہ تحریک مزاحمت کی علامت بن چکے ہیں جو بغیر کسی خوف و خطر کے استقامت کے ساتھ کشمیریوں کے لیے حق خودارادیت کی وکالت کررہے ہیں۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق غیر قانونی طورپر نظربند سینئر حریت رہنما شبیر ا حمد شاہ کی نظربندی کے 31سال مکمل ہونے کے سلسلے میں سرینگر میں منعقدہ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈیموکریٹک فریڈم پارٹی کے جنرل سیکرٹری محمد عبداللہ طاری نے کہا کہ شبیر احمد شاہ نے جس سیاسی فکر کی ترویج کا ذمہ سن بلوغیت میں قدم رکھتے ہی لیا تھا وہ آج بھی اُسی پر قائم و دائم ہیں جس کی وجہ سے استعماریت کے علمبردار اُنہیں راہ کا کانٹا سمجھ کر اکثر سلاخوں کے پیچھے رکھتے ہیں۔

(جاری ہے)

اس موقع پرجموںو کشمیر ڈیمو کریٹک فریڈم پارٹی کے اراکین، عہدیداران اور دیگر لوگوں نے اس عزم کاا عادہ کیا کہ اُن کے سیاسی مشن کی تکمیل میں کوئی دقیقہ فروگذاشت نہیں کیا جائے گا۔مقررین نے بھارت پر زور دیا کہ وہ ظلم و جبر کی پالیسی ترک کرکے تنازعہ کشمیر کا حل تلاش کرنے کے لیے ٹھوس اقدامات کرے۔انہوںنے کہاکہ ہم شبیر شاہ کی قید و بند سے مایوس یا خوفزدہ نہیںالبتہ اُن کی بگڑتی ہوئی صحت پرتشویش میں مبتلا ہیں کیونکہ وہ کئی امراض میں مبتلا ہیں۔

انہوں نے کہا اگر اُنہیں مناسب علاج و معالجہ فراہم نہ کیا گیا تو اُن کی زندگی کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ بھارتی عدلیہ کومعلوم ہے کہ شبیر احمد شاہ کیخلاف کوئی الزام ثابت نہیں کیا جاسکتا ہے لیکن سیاسی انتقام کے تحت اُن کی نظربندی کو طول دیا جارہا ہے۔ انہوں نے انسانی حقوق کی تنظیموں پر زوردیا کہ وہ اس سلسلے میںاپنا کردار ادا کریں۔

دریںاثناء فریڈم پارٹی کے ترجمان نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں شبیر احمد شاہ سمیت اُن سینکڑوں کشمیری نظربندوں کو سلام پیش کیا جو کشمیر اور بھارت کی جیلوں میں آزادی پسند ہونے کی سزا کاٹ رہے ہیں۔ انہوں نے شہداء کشمیر کی عظیم قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہاکہ ان کے طفیل تنازعہ کشمیر کی صدائیں عالمی ایوانوں میں گونج رہی ہیں۔ترجمان نے شہدا کے والدین و دیگر قریبی رشتہ دارکو بھی خراج تحسین پیش کیا۔

متعلقہ عنوان :