چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے شہر خموشاں کی تشہیر کیلئے وزیراعلیٰ پنجاب کی تصاویر استعمال کرنے سے روک دیا

اتوار اپریل 22:30

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے شہر خموشاں کی تشہیر کیلئے وزیراعلیٰ ..
لاہور۔29 اپریل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 اپریل2018ء) چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے شہر خموشاں کی تشہیر کیلئے وزیراعلیٰ پنجاب کی تصاویر استعمال کرنے سے روک دیا۔۔چیف جسٹس نے چیف سیکرٹری کو حکم دیا کہ شہر خوموشاں کی تشہیر میں وزیر اعلیٰ پنجاب کی تصویر نظر نہ آئے۔

(جاری ہے)

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے عوامی شکایات پر سماعت کی جس کے دوران عدالتی حکم پر مسلم لیگ ن کے رہنما طلحہ برکی پیش ہوئی. شکایت کنندہ نے چیف جسٹس پاکستان کو آگاہ کیا کہ طلحہ برکی وزیر اعلیٰ پنجاب کے مشیر کی حیثیت سے کام کر رہے ہیں. چیف جسٹس نے طلحہ برکی سے استفسار کیا کہ کن معاملات میں مداخلت کررہے ہیں جس پر طلحہ برکی نے بتایا کہ وہ صرف حلقہ میں لوگوں کے مسائل سنتے ہیں. چیف جسٹس پاکستان نے طلحہ برکی کو باور کرایا کہ ایسا لگا کہ آپ توقیر شاہ کی ذمہ داریاں نبھا رہے ہیں..سماعت کے دوران شادی وال کے علاقے میں قبرستان نہ ہونے پر چیف جسٹس نے تشویش کا اظہار کیا اور قرار دیا کہ لوگوں کے پاس اپنوں کو دفنانے کی جگہ نہیں ہے جس پر چیف سیکرٹری پنجاب نے بتایا کہ شہرخاموشاں کے نام سے جگہ ایکوئر کررکھی ہی. چیف جسٹس پاکستان نے قبرستان پر تجاوزات کے بارے میں کمیشن قائم کر دیا اور کمیشن کو ہدایت کی کہ 15 دنوں میں رپورٹ پیش کی جائے۔