شہزادہ ولیم کے بیٹے کا نام متحدہ ہندوستان کے آخری وائسرے کے نام سے منسوب

لارڈ ماوئنٹ بیٹن کا اصل نام لوئس آرتھر چارلس تھا،شہزادہ ولیم نے تیسرے بیٹے کو یہی نام دیدیا

پیر اپریل 13:00

نئی دہلی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 اپریل2018ء) متحدہ ہندوستان کے آخری وائسرے لارڈ مائونٹ بیٹن کا اصل نام لوئس مائونٹ بیٹن تھا۔برطانوی شاہی خاندان سے تعلق رکھنے والے مائونٹ بیٹن سیاستدان بھی تھے اور برطانوی بحری فوج کے افسر بھی۔انہیں تقسیم ِ ہندباالخصوص کشمیر کے حوالے سے ایک متنازع کردار کے طور پر جانا جاتا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق بہت کم لوگ جانتے ہیں کہ مائونٹ بیٹن کو 1979ء میں آئرش علیحدگی پسندوں نے ایک حملے میں قتل کر دیا تھاجب وہ آئرلینڈ کے ساحلی علاقے میں اپنی کشتی پر مچھلی کے شکار کے لیے نکلے تھے۔

(جاری ہے)

اس وقت ان کی عمر 79 برس تھی۔لارڈ مائونٹ بیٹن کی کشتی کو دھماکے سے اٴْڑایا گیا تھا۔ یہ کوئی حادثہ نہیں تھا بلکہ حملہ آوروں کا نشانہ مائونٹ بیٹن ہی تھے۔دھماکے میں مائونٹ بیٹن کے ساتھ ساتھ ان کے خاندان کے کئی اور افراد بھی ہلاک ہوئے تھے۔۔برطانیہ کا شاہی خاندان آج بھی مائونٹ بیٹن اوران کی خدمات کو نہیں بھولا۔انہیں یاد رکھنے کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ شہزادہ ولیم کے ہاں پیدا ہونے والے تیسرے بچے کانام لوئس رکھا گیا ہے جو لارڈ مائونٹ بیٹن کا اصل نام تھا۔ننھے شہزادے کا نام لوئس آرتھر چارلس ہے۔