ڈاکٹر علامہ محمد اقبال کے افکار عالمی سطح پر پذیرائی حاصل کر رہے ہیں‘جاوید آفتاب احمد

کلام اقبال گل و بلبل اور عشق و عاشقی کا خزینہ نہیں بلکہ جہد مسلسل اور عمل پیہم کا اک آئینہ ہے‘ماہر قانون

پیر اپریل 13:04

سرگودھا (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 اپریل2018ء) ماہر قانون جاوید آفتاب احمد نے کہا کہ ڈاکٹر علامہ محمد اقبال کے افکار عالمی سطح پر پذیرائی حاصل کر رہے ہیں۔ نسل نو میں فکر اقبال سے استفادہ کا رجحان بیدار کرنے کے لیے مسلسل محنت کی ضرورت ہے۔ کلام اقبال گل و بلبل اور عشق و عاشقی کا خزینہ نہیں بلکہ جہد مسلسل اور عمل پیہم کا اک آئینہ ہے۔

انھوں نے گفتگو کر تے ہوئیکہا کہ اقبال ہر دور کے شاعر ہیں۔ ان کا پیش کردہ نظام تعلیم طالب علموں کو باعمل انسان بناتا ہے۔

(جاری ہے)

اقبال کا شاہین ہمیشہ محو پرواز رہتا ہے۔ ڈاکٹر علامہ اقبال ہمارے قومی شاعر ہیں مگر افسوس کہ فکر اقبال سے استفادہ نہیںکرتے۔ کلام اقبال کو نصاب میں بطریق احسن شامل کرنے کی ضرورت ہے۔ محمد مشرف حسین انجم نے شاعر مشر ق کو منظوم ہدیہ عقیدت پیش کیا۔ ڈاکٹر ہارون الرشید تبسم نے کہا کہ اقبال کا آفاقی پیغام دنیا کو امن کا گہوارہ بنا سکتا ہے۔ فکر اقبال کے عصری تقاضے ہمارے لیے مشعل راہ ہیں۔ پاکستان میں اقبال شناسوں نے ان کا پیغام دنیا تک پہنچانے کے لیے قابل قدر کردار ادا کیا ہے۔