جو شخص 22 سال سے اپنی تقریر نہ بدل سکا وہ ملک کی تقدیر کیسے بدلے گا، شہباز شریف

پیر اپریل 15:40

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 اپریل2018ء) وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ عمران خان کی تقرپر کا متن صرف میں تھا انہوں نے کہا کہ جو شخص 22 سال سے اپنی تقریر کو نہ بدل سکا وہ ملک کی تقدیر کو کیسے بدلے گا انہوں نے کہا کہ عمران خان کی گزشتہ روز کی جانے والی تقریر صرف اور صرف ان کی اپنی ذات کے اردگرد گھومتی رہی کہ میں ہوں تو سب کچھ ممکن ہے میں نہیں تو کچھ بھی نہیں انہوں نے کہا کہ ایک ہمارا ایک طبقہ تقدیر بدلنے کی امید لگائے بیٹھا ہے انہوں نے کہا کہ 5 سال صوبائی حکومت کرنے کے بعد شوکت خانم،نمل یونیورسٹی اور کرکٹ کی باتیں کرینگے تو سمجھ لو شکست آپ کا مقدر بن چکی ہے وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان سے سوال کیا کہ آپ نے کے پی کے میں احتساب کا نظام کیوں بند رکھا ،وہاں تعلیمی نظام کو کیوں نہیں بدلا نئے تعلیمی ادارے کیوں نہیں بنائے گئے وہاں زرعی ایمرجنسی کیوں نہیں نافذ کی گئی ہائیڈرو بجلی گھر کیوں قائم نہیں کئے گئے شہباز شریف نے شوگر مافیا سے متعلق کہا کہ شوگر مافیا میں شوگر کنگ جہانگیر ترین بھی شامل ہیںوزیر اعلیٰ پنجاب نے اپنی حکومت پر نظر ڈالتے ہوئے کہا کہ ہماری سیاست ملک و قوم کی خدمت کرنا ہے ہم نے تعمیروترقی کے منصوبوں کو معیاراوررفتار کے ساتھ آگے بڑھایا ہے قوم کو اندھیروں اورمشکلات سے نکالا ہے انھوں نے مزید کہا کہ عوام کی خدمت خالی نعروں سے نہیں ہوتی بلکہ اس کیلئے مٹی کے ساتھ مٹی ہونا پڑتا ہے۔