مظفرآباد کے معروف قدیمی بازار کے چھ انٹری پوائنٹس پر سخت سیکیورٹی

انتظامات،تاجر کمیونٹی اور سول سوسائٹی کی طرف سے انتظامیہ کو خراج تحسین پیش

پیر اپریل 20:51

مظفرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 اپریل2018ء) موٹرسائیکل داخلے پر دو ماہ کیلئے دفعہ 144 نافذ، دارالحکومت مظفرآباد کے معروف قدیمی بازار کے چھے انٹری پوائنٹس پر ضلعی انتظامیہ کی جانب سے سخت سیکیورٹی کے انتظامات،تاجر کمیونٹی اور سول سوسائٹی کی طرف سے انتظامیہ کو خراج تحسین پیش۔بازاروں میں موٹرسائیکل پر دفعہ 144 کا نفاذ خوش آئند، رکشے اور دیگر گاڑیوں پر بھی پابندی لگائی جائے، سول سوسائٹی اور تاجروں کا مشترکہ مطالبہ سامنے آگیا، انتظامیہ کے اس اقدام سے بازاروں کے اندر رش کم ہوگا جس سے نہ صرف تاجر کمیونٹی بلکہ آنیوالے شہریوں کی مشکلات میں بھی کمی آئیگی۔

تنگ گلیوں میں پیدل چلنا مشکل ہوتا ہے اگر موٹرسائیکل اور دیگر گاڑیوں کی آمد و رفت کا سلسلہ رہے گا تو بازار میں رونقیں متاثر رہیں گی۔

(جاری ہے)

گزشتہ روز ڈپٹی کمشنر مظفرآباد کی ہدایت پر نائب تحصیلیدار مظفرآباد محمد بلال فاتح کی زیر نگرانی میونسپل کارپوریشن کے اہلکاران ، سٹی پولیس اور ٹریفک اہلکاران نے قدیمی بازار کے چھے انٹری پوائنٹس جن میں فاطمہ جناح پوسٹ گریجویٹ کالج، حمام والی مسجد، امام بارگاہ عقب گلی، امام بارگاہ گلی، نیو سٹی تھانہ چوک، پرانے سٹی تھانہ پر موٹر سائیکل داخلے پر پابندی پر عملدرآمد کیلئے سخت سیکیورٹی انتظامات کیئے گئے، شہریوں کی جانب سے اس اقدام کو خوش آئند قرار دیا گیا، تاہم تاجر کمیونٹی کی جانب سے یہ مطالبہ سامنے آیا ہے کہ قدیمی بازار مدینہ مارکیٹ، مین بازار ، کالج روڈ دیگر مقامات پر کام کرنیوالے تاجر کمیونٹی کے موٹرسائیکلز کیلئے خصوصی پاسز جاری کیئے جائیں علاوہ ازیں تنگ گلیوں مں موٹرسائیکلز پر پابندی کا اقدام خوش آئند ہے بازاروں کے اندر رہائشیوں کیلئے بھی پاسز جاری کیئے جائیں باقی تمام چھوٹی بڑی گاڑیوں پر پابندی ہونی چاہیے اس سے بازاروں کی رونقیں بحال رہیں گی ایسے اقدامات سے تاجروں اور گاہکوں کی مشکلات ختم ہو جائیںگی اور کسی بھی قسم کی ایمرجنسی کی صورتحال پر بھی آسانی سے کنٹرول ممکن ہوسکے گا۔

نائب تحصیلدار محمد بلال فاتح تمام انٹری پوائنٹس کی از خود نگرانی کرتے رہے تاہم موٹرسائیکل سواروں کو بڑے طریقے اور سلیقے کیساتھ سمجھاتے اور واپس کرتے رہے اور کہا کہ شہریوں کو ایسے اقدامات میں انتظامیہ کیساتھ تعاون کرنا چاہیے ایسے قوانین شہریوں کو سہولیات دینے کیلئے ہوتے ہیں اس لیئے تاجر کمیونٹی اور شہریوں کو بڑے چڑھ کر اپنا کردار ادا کرنا چاہیے یاد رہے کہ تاجر کمیونٹی اور سول سوسائٹی کی جانب سے انتظامیہ کے اس اقدامات کی حوصلہ افزائی کی گئی۔