پشاورپولیس نے 48 گھنٹے کے اندر قتل و ڈکیتی کا سراغ لگا کر ملزم کو آلہ قتل سمیت گرفتار کر لیا

پیر اپریل 22:48

پشاور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 اپریل2018ء) پشاورپولیس نے 48 گھنٹے کے اندر قتل و ڈکیتی کا سراغ لگا کر ملزم کو آلہ قتل سمیت گرفتار کر لیا۔ ملزم مقتولہ کا شوہر نکلا بیوی کو قتل کر نے کے بعدجرم کو چھپانے کیلئے ڈکیتی کا رنگ دیا ملزم سے مقتولہ کے 5 عدد موبائیل سیٹ اور گاڑی برآمدکرلی۔ سائرہ سحر زوجہ محمد نثار سکنہ اسلام آباد نی28اپریل کوتھانہ پھندو میںرپورٹ درج کی کہ میں اپنی بہن کی قتل کی اطلاع ملنے پر بہن کے گھر آئی میری بہن کی شادی الیاس ولد محمد منان ساکن حاجی کیمپ اڈہ کیساتھ ہوئی تھی گھریلوناچاقی کی بنا پراسے طلاق ہوئی پھر میری بہن کی شادی مسمی عبدا لباسط ولد جلیل سکنہ اعجاز آباد کیساتھ ہوئی‘ آج میری بہن گھرمیں اکیلی تھی کہ اس دوران کوئی ملزم یا ملزمان نا معلوم گھر میں داخل ہو کر میری بہن پر اسلحہ آتشین سے فائرنگ کر کے قتل کیا۔

(جاری ہے)

سی سی پی او پشاو ر قاضی جمیل الرحمن نے واقعہ کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے ایس ایس پی آپریشن جاوید اقبال کی نگرانی میں ایس پی سٹی شہزادہ کوکب فاروق ،اے ایس پی گلبہار حسن جہانگیر کی قیادت میں ایس ایچ او پھندو عرفان خان،انوسٹی گیشن آفیسر قیمت گل خان بمعہ دیگر نفری پولیس پر مشتمل خصوصی ٹیم تشکیل دی جنہوں نے سائنسی خطوط اور پیشہ ورانہ مہارت سے مقدمہ کی تفتیش کر کے اصل حقائق سامنے لا کر قتل میں ملوث ملزم عبدالباسط ولد جلیل سکنہ اعجاز آباد مقتولہ نبیلہ کنول کا شوہر کو آلہ قتل سمیت گرفتار کر کے انکے قبضے سے مقتولہ کے 5 عدد موبائیل سیٹ ،VXR موٹر کار نمبر VC.7422 اور واردات میں استعمال ہونے والا اسلحہ 9mm پستول بمعہ 5 عدد کارتوس برآمد کر کے ملزم نے اعتراف جرم قبول کر لیا ملزم سے مزید تفتیش جاری ہے۔