رواں مالی سال 2017-18 ء کے پہلے 9 ماہ کے دوران ملک میں کی جانے والی غیر ملکی سرمایہ کاری سے حاصل ہونے والے منافع جات کی منتقلی میں 20 فیصد کا اضافہ

منگل مئی 10:30

رواں مالی سال 2017-18 ء کے پہلے 9 ماہ کے دوران ملک میں کی جانے والی غیر ملکی ..
اسلام آباد ۔ یکم مئی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 مئی2018ء) رواں مالی سال 2017-18 ء کے پہلے 9 ماہ کے دوران ملک میں کی جانے والی غیر ملکی سرمایہ کاری سے حاصل ہونے والے منافع جات کی منتقلی میں 20 فیصد کا اضافہ ہوا ہے اور جولائی تا مارچ 2017-18ء کے دوران غیر ملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے کی گئی سرمایہ کاری سے حاصل ہونے والے 1.6 ارب ڈالر کے منافع جات اپنے اپنے ممالک کو منتقل کئے گئے ہیں جبکہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے دوران 1.328 ارب ڈالر کے منافع جات منتقل کئے گئے تھے۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق سب سے زیادہ منافع جات تیل و گیس کے شعبہ سے منتقل کئے گئے جن کا حجم 202 ملین ڈالر رہا ہے جبکہ مالیات کے شعبہ سے 194 ملین ڈالر کے منافع جات منتقل کئے گئے اسی طرح پاور سیکٹر سے 184.7 ملین ڈالر اور فرڈ سکیٹر سے 181 ملین ڈالر کے منافع جات منتقلی کی گئی ہے جبکہ کیمونیکیشن کے شعبہ سے حاصل ہونے والے 169 ملین ڈالر کے منافع جات اپنے اپنے ممالک کو بھجے گئے ہیں۔

(جاری ہے)

رپورٹ کے مطابق پاکستان میں نہ صرف سی پیک کے تحت مختلف شعبوں میں غیر ملکی سرمایہ کاری کی جا رہی ہے بلکہ آنے والے دنوں میں آٹو سیکٹر کے شعبہ میں بھی 800 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کی جا رہی ہے۔ جس سے قومی معیشت کی ترقی اور غیر ملکی سرمایہ کاری سے حاصل ہونے والے پر کشش منافع جات کی عکاسی ہوتی ہے۔

متعلقہ عنوان :