الیکشن کمیشن کی جانب سے عام انتخابات 2018ء میں پولنگ اسٹیشن کی تعداد گزشتہ انتخابات کے مقابلے میں 20فیصد بڑھا دی گئی

ہر قومی اور صوبائی اسمبلی کے حلقہ کیلئے الگ الگ ریٹرننگ افسران تعینات کئے جائیں گے ،تمام ریٹرننگ افسران عدلیہ سے ہوں گے عا م انتخابات 2018ء کی تیاریوں کے سلسلے میں الیکشن کمیشن کے افسران کا اہم اجلاس ،انتخابات کیلئے انتخابی مواد ،پولنگ اسٹیشنوں کے قیام ،انتخابی فہرستوں کی نظر ثانی، ریٹرننگ افسران اور پولنگ اسٹاف کی تعیناتی اور ٹریننگ کے حوالے سے بریفنگ دی گئی

منگل مئی 13:20

الیکشن کمیشن کی جانب سے عام انتخابات 2018ء میں پولنگ اسٹیشن کی تعداد ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 مئی2018ء) الیکشن کمیشن کی جانب سے عام انتخابات 2018ء میں پولنگ اسٹیشن کی تعداد گزشتہ انتخابات کے مقابلے میں 20فیصد بڑھا دی گئی ، ہر قومی اور صوبائی اسمبلی کے حلقہ کیلئے الگ الگ ریٹرننگ افسران تعینات کئے جائیں گے اورتمام ریٹرننگ افسران عدلیہ سے ہوں گے ۔تفصیلات کے مطابق صوبہ پنجاب کے حوالے سے عا م انتخابات 2018ء کی تیاریوں کے سلسلے میں الیکشن کمیشن کے افسران کا اہم اجلاس منعقد کیا گیا ۔

اجلاس کی سربراہی ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن ظفر اقبال حسین اور ڈاکٹر اختر نذیر حسین نے کی۔ صوبہ پنجاب کے تمام ڈویژنل اور ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنرز اور پی سی ایس آئی آر کے نمائندہ نے شرکت کی۔اجلاس میں انتخابات کیلئے انتخابی مواد ،پولنگ اسٹیشنوں کے قیام ،انتخابی فہرستوں کی نظر ثانی، ریٹرننگ افسران اور پولنگ اسٹاف کی تعیناتی اور ٹریننگ کے حوالے سے بریفنگ دی گئی ۔

(جاری ہے)

ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن ڈاکٹر اختر نذیر نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے تمام افسران کو تاکید کی کہ وہ صاف اور شفاف عام انتخابات 2018ء کے انعقادکو یقینی بنانے کے لئے تمام اقدامات اٹھائیں ۔اجلاس میں تمام ضلعی الیکشن کمشنرز نے اپنے ضلع میں انتخابات کی تیاریوں کے حوالے سے بریفنگ دی۔ پولنگ اسٹیشنوں کے قیام کے بارے میں بتایا گیا کہ عام انتخابات 2018ء میں پولنگ اسٹیشن کی تعداد عام انتخابات 2013ء کے مقابلے میں 20فیصد بڑھادی گئی ہے ۔

میٹنگ میں اس بات پر زور دیا گیا کہ تمام ضلعی الیکشن کمشنر زتمام پولنگ اسٹیشنوں کا ذاتی طور پر دورہ کریں تاکہ مناسب عمارات کا انتخاب کیا جاسکے ۔انتخابی مواد کے حوالے سے بات کرتے ہوئے جناب ظفر اقبال حسین نے کہا کہ 31مئی تک تمام انتخابی مواد ضلعی دفاتر میں پہنچا دیا جائے گا ۔انہوں نے کہا کہ تمام ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنرز مواد کے معیار اورمطلوبہ تعداد کے حوالے سے وقت پر آگاہ کریں ۔

پی سی ایس آئی آر کے افسران سے درخواست کی گئی کہ وہ انتخابات میں استعمال ہونے والی مقناطیسی سیاہی کے معیار کو مزید بہتر بنائیں ۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ اس دفعہ ہر قومی اور صوبائی اسمبلی کے حلقہ کیلئے الگ الگ ریٹرننگ افسران تعینات کئے جائیں گے اورتمام ریٹرننگ افسران عدلیہ سے تعینات کئے جائیں گے ۔پولنگ اسٹاف کی ٹریننگ کے حوالے سے تمام ضلعی الیکشن کمشنرز سے پروگریس رپورٹ لی گئی اور تمام پولنگ عملے کی تربیت کو یقینی بنانے کی تاکید کی گئی ۔

انتخابی فہرستوں کی نظر ثانی اور ڈسپلے سینٹرزپرفارموںکی وصولی کے آخری دن کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا گیا کہ تمام افسران ووٹرز رجسٹریشن کے عمل کو مقررہ وقت میں شفاف طریقہ سے مکمل کریں، تا کہ ہر شہر ی الیکشن کے دن اپنا حق رائے دہی استعمال کر سکے ۔