ٹرانسمیشن لائن ٹرپ کرجانے سے ملک بھر میں عارضی لوڈشیڈنگ کا امکان

تمام بجلی تقسیم کار کمپنیوں میں چند گھنٹے عارضی لوڈشیڈنگ کی جائیگی ،ْ لوڈ شیڈنگ کا تناسب نقصانات کو مد نظر رکھ کر کیا جائے گا ،ْ ترجمان پاور ڈویژن

منگل مئی 14:03

ْ اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 مئی2018ء) نیشنل ٹرانسمیشن ڈیسپیچ کمپنی (این ٹی ڈی سی) کی ٹرانسمیشن لائنز ٹرپ کر گئیں جس کے باعث ملک بھر میں عارضی طور پر لوڈشیڈنگ کا خدشہ ہے۔ترجمان پاور ڈویژن کے مطابق سسٹم سے 1200 میگاواٹ بجلی نکل گئی ،ْ تین ایل این جی پاور پلانٹس بھی ٹیسٹنگ کی وجہ سے بند ہیں جن میں چشمہ نیوکلیئر پاور پلانٹ ون، ٹو، تھری اور فورشامل ہیں۔

(جاری ہے)

ترجمان کے مطابق حویلی بہادرشاہ ، بھیکی پاور پلانٹ اور بلوکی پاور پلانٹ بند ہیں، تینوں ایل این جی پاور پلانٹس 3600 میگا واٹ صلاحیت کے حامل ہیں۔ترجمان پاور ڈویژن نے توقع ظاہر کی ہے کہ چشمہ ون اور چشمہ ٹو کی بحالی شام تک ہوسکتی ہے تاہم چشمہ تھری اور چشمہ فور کی بحالی میں وقت لگ سکتا ہے۔ترجمان کے مطابق صوبوں کی طرف سے پانی کی کم طلب کے باعث پن بجلی کی پیداوار بھی کم ہے، نیلم جہلم پاور پلانٹ بھی تاحال ٹیسٹنگ کے مرحلے میں ہے اور مجموعی صورتحال کی وجہ سے قومی گرڈ کو بجلی شارٹ فال کا سامنا ہے۔ترجمان پاور ڈویژن کا کہنا ہے کہ تمام بجلی تقسیم کار کمپنیوں میں چند گھنٹے عارضی لوڈشیڈنگ کی جائے گی اور لوڈ شیڈنگ کا تناسب نقصانات کو مد نظر رکھ کر کیا جائے گا۔