قومی بچت اسکیموں پر منافع کی شرح میں 14 ماہ بعد اضافہ ،ْاطلاق ہوگیا

منگل مئی 14:03

قومی بچت اسکیموں پر منافع کی شرح میں 14 ماہ بعد اضافہ ،ْاطلاق ہوگیا
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 مئی2018ء)قومی بچت اسکیموں پر منافع کی شرح میں 14 ماہ بعد اضافہ کردیا گیا جن کا اطلاق یکم مئی 2018 سے ہوگیا۔ڈائریکٹر جنرل قومی بچت ظفر مسعود کے مطابق بہبود سیونگ سرٹیفکیٹ کی شرح 0.72 فیصد بڑھادی گئی جس کے بعد نئی شرح منافع 9.36 فیصد سے بڑھ کر 10.08 فیصد ہوگئی ہے۔ڈی جی قومی بچت کے مطابق پینشنرز بینیفٹ اکاؤنٹس کے منافع میں بھی 0.72 فیصد اضافہ کیا گیا جو اب 10.08 فیصد ہوگیا ہے اور یہ پہلے 9.36 فیصد تھا۔

(جاری ہے)

انہوں نے بتایا کہ ڈیفنس سیونگ سرٹیفکیٹ کا شرح منافع 0.56 فیصد بڑھنے کے بعد اب 8.10 فیصدتک ہوگیا ہے ،ْ اسپیشل سیونگ سرٹیفکیٹ پر شرح منافع 0.77 فیصد اضافے کے باعث 6.80 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔ڈی جی قومی بچت کے مطابق ریگولر انکم سرٹیفکیٹ پر 1.09 فیصد کی شرح سے سب سے زیادہ اضافہ کیا گیا جس کی منافع کی شرح 6.54 فیصد سے بڑھاکر 7.63 فیصد کی گئی ہے۔انہوںنے کہاکہ سیونگ سرٹیفکیٹ پر منافع 0.55 فیصد بڑھایا گیا ہے جس کے بعد شرح منافع 4.50 فیصد ہوگا جو پہلے 3.95 فیصد تھی جبکہ تمام اسکیموں پر منافع کی نئی شرح کا اطلاق یکم مئی 2018 سے ہوگیا۔