رانا ثناء اللہ کے خلاف پنجاب اسمبلی میں مذمتی قرار داد جمع

گندی زبان رانا ثناء اللہ کا وطیرہ بن گیا ، وزارت سے ہٹا کر ان سے باز پرس کی جائے ، خواتین کے خلاف ان کی ریمارکس کی مذمت کرتے ہیں،تحریک انصاف

منگل مئی 15:23

رانا ثناء اللہ کے خلاف پنجاب اسمبلی میں مذمتی قرار داد جمع
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 مئی2018ء) وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ کے خلاف پنجاب اسمبلی میں مذمتی قرار داد جمع کرا دی گئی ہے سیاسی مخالفین کے خلاف گندی زبان رانا ثناء اللہ کا وطیرہ بن گیا ہے ۔ وزارت سے ہٹا کر ان سے باز پرس کی جائے ۔ خواتین کے خلاف ان کی ریمارکس کی مذمت کرتے ہیں تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی مراد راس نے گزشتہ روز پنجاب اسمبلی میں رانا ثناء اللہ کے خلاف مذمتی قرار داد جمع کرائی جس کے متن میں لکھا گیا ہے کہ سیاسی مخالفین کے خلاف بدکلامی ان کا وطیرہ بن چکا ہے۔

انہیں وزارت سے فوری طور پر ہٹایا جائے اور خواتین کے خلاف منتقلی باتیں کرنے پر ان سے باز پرس کی جائے ۔ وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ نے قرار داد کے حوالے سے اپنا موقف دیتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے ہمیشہ سیاسی خواتین کی جدوجہد کی قدر کی ہے صرف 2011 اور 29 اپریل کو ہونے والے پی ٹی آئی اجتماع کے فرق کی نشاندہی کی ہے انہوں نے کہا کہ 2011 میں سیاسی جدوجہد کرنے والی فیملیز آئیں جبکہ 29 اپریل کے جلسے میں وہ فیمیلیز کہیں بھی نظر نہیں آئی تاہم کسی سیاسی خاتون کی سیاسی جدوجہد سے متعلق انہوں نے منفی بات نہیں کی ۔

(جاری ہے)

رانا ثناء اللہ نے پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان خواتین کا کتنا احترام کرتے ہیں وہ سب کو پتہ ہے ۔ ۔