ہائی ٹرانسمیشن لائنز ٹرپ،ملک بھر سے 1200میگا واٹ بجلی سسٹم سے نکل گئی، لوڈ شیڈنگ میں اضافے کا خدشہ

ایل این جی کے تین پاور پلانٹس ٹیسٹنگ کی وجہ سے بند ہونے سے 3600 میگا واٹ کی اضافی بجلی بھی بند ہوگئی‘ مجموعی طور پر ملک بھر میں 6ہزار میگا واٹ شارٹ فال ہوگیا‘ ترجمان پاور ڈویژن کی بجلی صارفین سے بجلی کم استعمال کرنے کی اپیل

منگل مئی 15:30

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 مئی2018ء) این ٹی ڈی سی کی ہائی ٹرانسمیشن لائنز ٹرپ کرنے سے ملک بھر میں 1200میگا واٹ بجلی سسٹم سے نکل گئی‘ ایل این جی کے تین پاور پلانٹس ٹیسٹنگ کی وجہ سے بند ہونے کے باعث 3600 میگا واٹ کی اضافی بجلی بھی بند ہوگئی‘ مجموعی طور پر ملک بھر میں 6ہزار میگا واٹ شارٹ فال ہوگیا‘ ترجمان پاور ڈویژن نے بجلی صارفین سے بجلی کم استعمال کرنے کی اپیل کردی۔

منگل کو ترجمان پاور ڈویژن کے مطابق این ٹی ڈی سی کی ہائی ٹرناسمیشن لائنز ٹرپ کرگئیں جس کے باعث سسٹم سے 1200 میگا واٹ بجلی نکل گئی بند ہونے والے پاور پلانٹس میں چشمہ نیوکلیئر پاور پلانٹ ون‘ ٹو‘ تھری اور فور شامل ہیں اس کے علاوہ 3600 میگاواٹ کے تین ایل این جی پاور پلانٹس بھی ٹیسٹنگ کی وجہ سے بند ہیں جن میں حویلی بہادر شاہ‘ بھیکی پاور پلانٹ اور بلوکی پاور پلانٹ شامل ہیں۔

(جاری ہے)

اس صورتحال کی وجہ سے ملک میں بجلی کا شارٹ فال چھ ہزار میگا واٹ سے تجاوز کرگیا جس کی وجہ سے ملک میں لوڈشیڈنگ بڑھنے کا امکان ہے۔ چشمہ ون اور چشمہ ٹو پر بحالی کا کام جلد مکمل ہونے کی امید ہے جبکہ چشمہ تھری اور چشمہ فور کی بحالی میں وقت لگ سکتا ہے ترجمان پاور ڈویژن نے بجلی صارفین سے اس عارضی دورانیہ میں تعاون اور بجلی کا استعمال کم کرنے کی اپیل کردی۔

متعلقہ عنوان :