خیبر پختونخوا پولیس کی سال رواں کے پہلے چارمہینوں کی کارکردگی رپورٹ

منگل مئی 18:15

پشاور۔یکم مئی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 مئی2018ء) خیبرپختونخوا میں رواں سال کے پہلے چار مہینوں میں مختلف جرائم میں نمایاں کمی واقع ہوئی۔دہشت گردوں اور دیگر جرائم پیشہ عناصر کے مقامی آبادی میں عارضی ٹھکانوں کو ختم کرنے کے خلاف خیبر پختونحوا پولیس نے 5097 مقدمات درج کئے جو کہ پچھلے سال کے مقابلے میں 74فیصد زیادہ ہیں ۔ اس طرح پولیس پر حملوں میں بھی نمایاں کمی واقع ہوئی یعنی پچھلے سال پولیس پر61 جبکہ رواں سال 25عدد کم ہو کر 36واقعات رونما ہوئے جوگزشتہ سال کے مقابلے میں 41فیصد کم ہیں جبکہ دیگر سرکاری ملازمین پر گزشتہ سال حملوں کے 29واقعات کی نسبت رواں سال 17واقعات پیش آئے جوکہ 41فیصد کمی کو ظاہر کرتے ہیں ۔

اس طرح ڈکیتی کی وارداتوں میں 47فیصد نمایاں کمی دیکھی گئی یعنی پچھلے سال یہ واقعات 15تھے جبکہ رواں سال 8ہیں ۔

(جاری ہے)

اسکے ساتھ ساتھ چوری کے واقعات میں بھی واضح کمی نوٹ کی گئی یعنی گزشتہ سال 290 واقعات کے مقابلے میں رواں سال 19 عدد کم ہو کر 271رہ گئے۔جبکہ چوری میں 6فیصد ،گاڑیوں کی چوری کے واقعات میں 20فیصد اور بھتہ خوری کے واقعات میں 58فیصدکمی واقع ہوئی۔اس طرح حساس اور غیر محفوظ مقامات کی سیکورٹی فول پروف بنانے کے لیے خیبر پختونخوا پولیس نے ان مقامات کی انتظامیا ں کو بارہا تاکید اور سیکیورٹی ایڈوئزری جاری کرنے کے باوجود عمل دآرمد نہ کرنے پران کے خلاف 2022مقدمات رجسٹر کیے جوکہ پچھلے سال کے مقابلے میں 108عدد زیادہ ہیں ۔