لاڑکانہ ، ضلع بے نظیر آباد میں سورج کا پارہ 50ڈگری تک جا پہنچا

ہیٹ اسٹروک سے درجنوں افراد بے ہوش ، متاثرہ افراد کو ہسپتالوں و طبی مراکز پہنچا دیا گیا

منگل مئی 20:12

نوابشاہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 مئی2018ء) گرمی کی شدت کے سبب لاڑکانہ اور ضلع بے نظیر آباد میں سورج کا پارہ 49 اور 50 ڈگری سینٹی گریڈ تک جا پہنچا، جس کے باعث ہیٹ اسٹروک سے درجنوں افراد بے ہوش ہوگئے۔متاثرہ افراد کو نوابشاہ کے پیپلز میڈیکل یونیورسٹی ہسپتال اور گردو نواح کے علاقوں میں موجود طبی مراکز میں علاج کے لیے لایا گیا تھا۔۔گرمی کی شدت کے سبب گلیاں اور بازار ویران جبکہ تجارتی سرگرمیاں نہ ہونے کے برابر رہیں اور لوگوں نے پورا دن گھروں میں رہنے کو ترجیح دی، ہیٹ اسٹروک سے متاثر ہونے والے افراد میں زیادہ تر مزدور اور موٹر سائیکل سوار تھے۔

اس حوالے سے ڈاکٹرز نے شہریوں کو ہدایت کی کہ لوگ زیادہ سے زیادہ پانی اور پھلوں کے رس کا استعمال کریں جبکہ کھانے پینے کی اشیا باہر سے خریدنے سے گریز کریں اور گھر میں تیار کریں۔

(جاری ہے)

اس کے علاوہ ڈاکٹرز نے شہریوں کو باہر نکلتے ہوئے سر کو سفید کپڑے سے ڈھانک کر رکھنے کی تجویز بھی دی۔۔گرمی کی شدت کے باعث روہڑی کنال میں نہاتے ہوئے دو دوست ڈوب کر ہلاک ہوگئے۔

اہل خانہ کے مطابق انٹرمیڈیٹ کے طالب علم، 16 برس کے احسن میمن اور ان کے عزیز حفیظ میمن اپنے دوستوں کے ہمراہ نہر میں نہانے کے لیے گئے تھے، جہاں حفیظ اپنا توازن کھو کر گہرے پانی میں گر گیا جس کو بچانے کے لیے احسن نے بھی چھلانگ لگادی تاہم دونوں نوجوان باہر نہ آسکے اور ڈوب گئے۔مقامی غوطہ خوروں کی ناکامی کے بعد سکرند کے اسسٹنٹ ڈپٹی کمشنر سلامت میمن کی جانب سے پاکستان نیوی کے غوطہ خوروں سے، ہلاک ہونے والے نوجونوں کی لاشیں نکالنے کے لیے، مدد فراہم کرنے کی درخواست کی گئی۔۔