کوئٹہ میں ہزارہ مقتولین کا قاتل آپریشن میں مارا جا چکا ہے،ڈی آئی جی پولیس کا دعویٰ

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس منگل مئی 21:58

کوئٹہ میں ہزارہ مقتولین کا قاتل آپریشن میں مارا جا چکا ہے،ڈی آئی جی ..
کوئٹہ(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار- 01مئی 2018ء ) ::پولیس کا کوئٹہ میں ہزارہ قبیلے کو ٹارگٹ بنانے والے دہشتگرد کو مارنے کا دعویٰ سامنے آگیا۔ڈی آئی جی پولیس عبدالرزاق چیمہ نے دعویٰ کیا ہے کہ کوئٹہ میں ہزارہ مقتولین کا قاتل مستونگ آپریشن میں مارا جا چکا ہے۔تفصیلات کے مطابق ہزارہ برادری ایک لمبے عرصے سے ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنتی چلی آ رہی ہے۔

(جاری ہے)

اس وقت بھی گزشتہ روز مارے جانے والے مقتولین کے لیے انصاف مانگتے ہوئے ہزارہ برادری کے افراد سراپا احتجاج ہیں اور کوئٹہ میں دھرنا دئیے ہوئے ہیں۔

اس دوران پولیس کا کوئٹہ میں ہزارہ قبیلے کو ٹارگٹ بنانے والے دہشتگرد کو مارنے کا دعویٰ سامنے آگیا۔ڈی آئی جی پولیس عبدالرزاق چیمہ نے دعویٰ کیا ہے کہ کوئٹہ میں ہزارہ مقتولین کا قاتل مستونگ آپریشن میں مارا جا چکا ہے۔سکاوٹ برگیڈئیر تصور ستار کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ مذکورہ ٹارگٹ کلر علاقے میں مضبوط نیٹ ورک رکھتا تھا جسے سکیورٹی فورسز نے بروقت کاروائی کرتے ہوئے توڑ دیا جبکہ ٹارگٹ کلر بھی مارا جا چکا ہے۔