ملک میں قانون کی حکمرانی ہی تمام مسائل کا حل ہے سفارش اور رشوت نے قومی اداروں کو بتاہ کرکے رکھ دیا ، چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے کسٹم اینڈ ڈرائی پورٹ

بدھ مئی 19:32

ملک میں قانون کی حکمرانی ہی تمام مسائل کا حل ہے سفارش اور رشوت نے قومی ..
فیصل آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 مئی2018ء) فیصل آبدچیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ا یگزیکٹو ممبر و چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے کسٹم انیڈ ڈرائی پورٹ حاجی محمد اصغر نے کہا ہے کہ ملک میں قانون کی حکمرانی ہی تمام مسائل کا حل ہے سفارش اور رشوت نے قومی اداروں کو بتاہ کرکے رکھ دیا ہے ، کوئی بھی ادارہ اپنے آپ کو ٹھیک نہیں کرنا چاہتا،،پولیس سمیت دیگر اداروں کے سرکاری ملازمین کی تنخواہ میں اضافہ کے بعد بھی کوئی بہتر ی نہیں آئی ،عوام ٹیکس ادا کرنا چاہتی ہے مگر ان کو بنیادی سہولتیں نہیں دی جاتی اور ٹیکس نظام کو بہتر کرنے کی ضرورت ہے ، توانائی اور پانی کے بحران کیلئے کالاباغ ڈیم تعمیر ضروری ہے انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہاکہ اگر حکمران جماعت نے آئندہ انتخابات میںاگر تاجر برادری کی حمایت چاہتی ہے تو اسے فوری طور پر ود ہولڈنگ ٹیکس کا مکمل خاتمہ ،سیلز ٹیکس50 لاکھ سے بڑھا کر 5 کروڑ کرنے اورچھوٹے تاجروں کو ویلتھ سٹیٹمنٹ سے مستثنی رکھنے ،،بجلی کی بلوں میں شامل 9 اقسام کے ٹیکسوں کے خاتمہ ،پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ واپس لینے، ملک میں منی بجٹ کی روایت ختم کرنے اور نئے بجٹ میں تعلیم و صحت کے شعبوں کے ساتھ ساتھ کالا باغ ڈیم کی تعمیر کیلئے فنڈز مختص کرنے کااعلان کرنا ہوگا ،مزید کہا کہ غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ نے عوام کی زندگی اجیرن بنادی ہے، مسلم لیگ (ن) نے اپنے انتخابی منشور میں چھے ماہ میں لوڈشیڈنگ کے خاتمے کا وعدہ کیا تھا مگر پانچ سال ہونے کوہیں،ابھی تک لوڈشیڈنگ کاخاتمہ نہیں ہوسکا۔

(جاری ہے)

ملک میں اس وقت انرجی بحران کی ذمے دار مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کی سابقہ حکومتیں ہیں۔اگر وہ اس پر پہلے سے منصوبہ بندی کرتیں اور چھوٹے بڑے ڈیم بنائے جاتے تو آج قوم کو لوڈشیڈنگ کی اذیت کا سامنا نہ کرنا پڑتا،ضرورت ہے کہ حکومت کالاباغ ڈیم کے حوالے سے تمام فریقین کواعتماد میں لے۔کالاباغ کی تعمیر سے جہاں ایک طرف سستی بجلی حاصل ہوگی وہاں دوسری جانب روزگار کے نئے مواقع بھی پیدا ہوں گے اور65لاکھ ایکڑبنجرزمین کو قابل کاشت بنایا جاسکے گا۔