سپریم کورٹ ، غیر قانونی شادی ہالز سے متعلق وفاقی محتسب رپورٹ پر فریقین کو اعتراضات رات تک جمع کرانے کا حکم

سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی

بدھ مئی 19:36

سپریم کورٹ ، غیر قانونی شادی ہالز سے متعلق وفاقی محتسب رپورٹ پر فریقین ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 مئی2018ء) سپریم کورٹ میں غیر قانونی شادی ہالز سے متعلق وفاقی محتسب رپورٹ پر فریقین کو اعتراضات رات تک جمع کرانے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی ہے، بدھ کے روز چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی،دوران سماعت جسٹس عمر عطائ بندیال نے ریمارکس دئییکہ شادی ہالز کی ویسٹ کے لیے قانون میں کیا بندوبست کیا گیا ہے، شادی فنکشنز کے فضلے کو کہاں ٹھکانے لگایا جاتا ہے، ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ شادی ہالز کی ریگولیشن میں فضلہ اور سیوریج سے متعلق قواعد موجود ہیں، شادی ہالز فضلہ اور سیوریج کو ٹھکانے لگانے کا بندوبست کرنے کے پابند ہوں گے، شادی ہالز مالکان کے وکیل نے عدالت سے شادی ہالز کو اعتراضات دائر کرنے کا موقع دئیے جانے کی استدعا کی تو چیف جسٹس نے استدعا منظور کرتے ہوئے ریمارکس دئیے کہ وفاقی محتسب رپورٹ کے خلاف جس نے اعتراضات دینے ہیں آج رات تک جمع کروا دے، آج کے بعد کسی کا اعتراض انٹرٹین نہیں کیا جائے گا،بعد ازاں عدالت نے کیس کی مزید سماعت غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کردی۔