اے پی اے کے دفترمیں ترقیاتی منصوبے کے ٹینڈر پر دو مخالف فریقین کے درمیان فائرنگ ،چار افراد شدید زخمی

بدھ مئی 20:34

جنوبی وزیرستان۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 مئی2018ء) پولیٹیکل کمپانڈ جنوبی وزیرستان کے ایڈیشنل پولیٹیکل ایجنٹ کے دفتر میں سولہ لاکھ روپے کے ترقیاتی منصوبے کے ٹینڈر پر دو مخالف فریقین کے درمیان فائرنگ چار افراد شدید زخمی ہوگئے ۔زخمیوں کو ہیڈکوارٹر ہسپتال ٹانک پہنچادئے گئے ۔جہاں پر ابتدائی طبعی امداد دینے کے بعد تین زخمیوں کی حالت تشویشناک ہونے پر ملتان ریفرکردئیے گئے۔

پولیٹیکل انتظامیہ نے خلیفہ ظفر محسود کی سربراہی میں مسلح لیویز فورس کے اہلکاروں کی چھاپہ مارٹیم تشکیل دیتے ہوئے دونوں فریقین کے اکیس افراد کو گرفتار کرکے حوالات میں بند کردئیے گئے ہیں ۔ پولیٹیکل انتظامیہ جنوبی وزیرستان کے زرائع کے مطابق تحصیل سراروغہ کے علاقہ گر گرے میں ایک سڑک کی صفائی کے سولہ لاکھ روپے کی لاگت کے منصوبے کے ٹینڈر ایڈیشنل پولیٹیکل ایجنٹ کے دفتر میں ہورہے تھے کہ محسود قبیلہ کی ذیلی شاخ شمرائی سے تعلق رکھنے والے دو قبیلوں کے درمیان ٹینڈر فارم بکس میں ڈالنے کے دوران توں توں میں میں شروع ہوکر فائرنگ کی نوبت تک پہنچ گئی۔

(جاری ہے)

عنایت اللہ محسود کے ایک فریق نے ملک فاروق محسود کے فریق پر اندھا دھند فائرنگ کردی ۔جس کی وجہ سے،ملک فاروق محسود، عثمان محسود ،مقرب محسود ،حیات اللہ شدید زخمی ہوگئے۔ زخمیوں کو فوری طور پر ہیڈکوارٹر ہسپتال ٹانک پہنچادئے گئے۔زخمیوں کو جب ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال ٹانک پہنچا دئے گئے تو مسلح افراد ہسپتال میں بھی داخل ہوگئے اور ہسپتال میں بھی فائرنگ شروع کردی ۔تاہم ایک قبائلی ملک نے جان کی پرواہ کئے بغیر خون خرابہ روکھنے کی غرض سے مسلح افراد سے اسلحہ چھیننے کی کوشش کی جس پر مسلح افراد ہسپتال سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ڈسٹرکٹ ہسپتال ٹانک میں پولیس کی نفری نہ ہونے کی وجہ سے مسلح افراد ہسپتال میں داخل ہوگئے اور فائرنگ کرتے ہوئے فرار ہوگئے۔