سندھ انویسٹمنٹ کلائمٹ امپروومنٹ سیل کے تحت پہلے بزنس فیسیلیٹیشن سینٹر کا باقاعدہ آغاز

بدھ مئی 21:53

کراچی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 مئی2018ء) سندھ بورڈ آف انویسٹمنٹ (ایس بی آئی) کے دفتر میں بدھ کو صوبے کے پہلے بزنس فیسیلیٹیشن سینٹر کا باقاعدہ افتتاح کر دیا گیا۔ اس سینٹر میں ویب پورٹل کے ذریعے کاروبار کا آغاز کرنے والوں کو ون ونڈو کے تحت کاروبار کے لئے مطلوبہ رجسٹریشن کا اجراء ممکن بنایا جائے گا۔ سینٹر کے قیام میں ورلڈ بینک نے ایس بی آئی کے ساتھ تعاون کیا ہے۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے چیئر پرسن ایس بی آئی ناہید میمن نے فیسیلیٹیشن سینٹر کے قیام کے اغراض و مقاصد بیان کرتے ہوئے کہا کہ سندھ میں سرمایہ کاری کے فروغ اور سرمایہ کاروں کو کاروبار کے آغاز کے لئے ون ونڈو کے ذریعے متعلقہ محکموں سے رجسٹریشن کے حصول، پرمیشن یا این او سی کے جلد از جلد اجراء کے لئے بزنس فیسیلیٹیشن سینٹر قائم کیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے بتایا کہ ایسے ہی فیسیلیٹیشن سینٹرز کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری، محکمہ محنت، محکمہ صنعت اور سیسی کے دفاتر میں بھی قائم کئے جائیں گے تاکہ سرمایہ کاروں کو ون ونڈو سہولت کے ذریعے مطلوبہ رجسٹریشن کے جلد از جلد اجراء کو یقینی بنایا جا سکے۔ انہوں نے سندھ انویسٹمنٹ کلائمٹ امپروومنٹ سیل (سکک) کے ذر یعے کاروبار کے آغاز کے لئے متعلقہ اداروں سے رجسٹریشن اور دیگر پرمیشنز کے اجراء کی مدت کو کم تر کرانے کے لئے ورلڈ بینک کی ٹیم کے تعاون کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ اس تعاون کے ذریعے صوبے میں سرمایہ کاری کے ماحول کو پرکشش بنانا ہی ہمارا بنیادی مقصد ہے۔

اس موقع پر ورلڈ بینک کے سینئر اکنامسٹ امجد بشیر نے خطاب کرتے ہوئے گزشتہ مہینوں میں سندھ حکومت کے مختلف اداروں کی جانب سے کی جانے والی اصلاحات کے بارے میں بتایا۔ اس موقع پر ورلڈ بینک کے پرائیویٹ سیکٹر اسپیشلسٹ Mr.Harve Kaddoura, آپریشن انالسٹ Mr.Albert Nogues,Mr Martin Palmer, سینئر پرائیویٹ سیکٹر اسپیشلسٹ مس کرن افضل کے علاوہ بورڈ اف انویسٹمنٹ اسلام آباد کی ایڈیشنل سیکریٹری فرینہ مظہر اور اسسٹنٹ ڈائریکٹر شاہ بانو خان جبکہ پرائیویٹ سیکٹر سے سندھ انویسٹمنٹ کلائمٹ کی ایڈوائزری کونسل کے ارکان میں اسد علی شاہ، حسن بخشی، ابراہیم شمسی، محمد شاہد علی حبیب، رضوان دیوان، عبدالرشید جان محمد، شہزاد صابر اور دیگر موجود تھے۔