سپریم کورٹ میں سابق لیگی ایم پی اے راشدہ یعقوب کی نااہلی کیخلاف درخواست جزوی طور پر منظو، الیکشن لڑنے کی اجازت

بدھ مئی 23:09

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 مئی2018ء) سپریم کورٹ نے ن لیگ کی سابق ایم پی اے راشدہ یعقوب کی نااہلی کیخلاف درخواست جزوی طور پر منظور کرتے ہوئے انہیں الیکشن لڑنے کی اجازت دے دی ہے، بدھ کے روز سپریم کورٹ میں جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے نظرثانی درخواست پر سماعت کی،دوران سماعت راشدہ یعقوب کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ عدالت نے خاوند کی نااہلی پر ان کی اہلیہ کو بھی نااہل قرار دیا، خاوند کی نااہلی کا اطلاق اہلیہ پر نہیں ہو سکتا، جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ ہم کہہ دیتے ہیں کہ راشدہ یعقوب ا?ئندہ الیکشن لڑ سکتی ہیں، راشدہ یعقوب کے وکیل نے کہا کہ ہم بھی ایک مہینے کیلئے صوبائی اسمبلی کی نشست پر بحالی نہیں چاہتے، چاہتے ہیں الیکشن میں حصہ لینے کی راہ میں نااہلی کی رکاوٹ ختم ہو عدالت نے وکلائ کے دلائل سننے کے بعد راشدہ یعقوب کو الیکشن لڑنے کی اجازت دیدی، راشدہ یعقوب کو خاوند شیخ یعقوب کو بینک ڈیفالٹر ہونے پر نااہل کیا گیا تھا وہ ضمنی الیکشن میں رکن اسمبلی منتخب ہوئی تھیں۔