پاکستان کوسٹ گارڈزکی اسمگلنگ کے خلاف مختلف کارروائیاں

بدھ مئی 23:45

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 مئی2018ء) ملک دشمن عناصر کی طرف سے اندرون/بیرون ملک اسمگلنگ کے بڑھتے ہوئے رجحان کو روکنے کے لیے پاکستان کوسٹ گارڈزنے اپنی ذمہ داری کے علاقوں میں گشت اور چیکنگ میں خاطر خواہ اضافہ کیا ہوا ہے۔۔پاکستان کوسٹ گارڈز نے گذشتہ 15دنوں کے دوران مختلف جگہوں پر کارروائیاں کرتے ہوئے درج ذیل اشیاء اور منشیات برآمد کیں۔

ناکہ کھاری چیک پوسٹ ((بلوچستان)) مسافر کوچ کی چیکنگ کے دوران ایک مسافر سی12 کلوگرام حشیش ۔سونا پاس چیک پوسٹ پرآئل ٹینکرسے 15,500لیٹر اسمگل شدہ ڈیزل ۔گورانی جنگل، پسنی ((بلوچستان ) مشکوک جگہ پر چھپائی ہوئی2100بوتلیں شراب اور 850بیئر کے ٹن۔ چوہڑ جمالی چیک پوسٹ ٹھٹہ((سندھ)) پر چیکنگ کے دوران ایک رکشہ سے 10 کلوگرام حشیش ۔ پسنی((بلوچستان)) کے قریب ڈوکی کے مقام پر ساحل سمندر پرریت میں چھپائی گئی00 10 کلوگرام حشیش ۔

(جاری ہے)

ابراہیم حیدری چیک پوسٹ پرایک لانچ سے 2,500لیٹر اسمگل شدہ ڈیزل ۔ مختلف گاڑیوں سے لاکھوںروپے مالیت کا سامان جس میں مختلف کمپنیوںکے موبائل فونز،غیر ملکی کپڑا ، الیکٹرانک اشیاء مختلف گاڑیوں کے ٹائراور سپیئر پارٹس اور چھالیہ شامل ہے۔پاک ایران بارڈر پر کارروائی کرتے ہوئی21تارکین وطن کو بھی گرفتار کیا گیا جو کہ غیر قانونی طور پر ایران جانیکی کوشش کر رہے تھے۔

تمام اسمگل کی جانے والی منشیات ، متفرق اشیاء ، گاڑیاں اور 06اسمگلرز اور21تارکین وطن کو پاکستان کوسٹ گارڈز نے اپنی تحویل میںلے لیا ہے اور مزید قانونی کارروائی کی جا رہی ہے ۔ پکڑی جانے والی منشیات ،متفرق اشیاء اور گاڑیوںکی مالیت اربوں روپے ہے۔۔پاکستان کوسٹ گارڈز اس امر کا اعادہ کرتی ہے کہ مستقبل میںبھی اس طرح کی کاروائیاں تسلسل کے ساتھ جاری رہیں گی تا کہ وطنِ عزیز کو اس لعنت سے نجات دلائی جا سکے اور اس مقصد کے حصول کے لئے تمام دستیاب وسائل کو بھرپور طریقے سے بروئے کار لایا جائے گا۔