پاکستانی گلوکارہ سونیا مجید یو اے ای کی گلوبل گڈول ایمبسڈر بن گئیں

سونیا نے حال ہی میں انٹرنیشنل پیس ایوارڈ جیتا تھا اور وہ ایسا کرنے والی پہلی پاکستانی گلوکارہ ہیں ْمیں اپنی گلوکاری کے ساتھ دنیا بھر میں امن محبت کیلئے اپنی خدمات پیش کرتی رہوں گی‘انٹرویو

جمعرات مئی 11:55

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 مئی2018ء) پاکستان کے لیے پہلی بار انٹرنیشنل پیس ایوارڈ حاصل کرنے والی گلوکارہ سونیا مجید متحدہ عرب امارات کی گلوبل گڈ ول ایمبسڈر بن گئیں۔۔لاہور سے تعلق رکھنے والی معروف گلوکارہ سونیا مجید نے حال ہی میں پاکستان کے لیے انٹرنیشنل پیس ایوارڈ جیتا تھا اور وہ ایسا کرنے والی پہلی پاکستانی گلوکارہ ہیں جب کہ اب انہیں متحدہ عرب امارات نے گلوبل گڈول ایمبسڈر بھی مقرر کردیا ہے۔

اپنے ایک انٹرویو میں گلوکارہ سونیا مجید کا کہنا تھا کہ خدا کا شکر ہے کہ مجھے عالمی سطح پر سراہا گیا، یو اے ای کی جانب سے مجھے ایمبسڈر مقرر کرنا میرے لئے اعزاز سے کم نہیں، میں اپنی گلوکاری کے ساتھ دنیا بھر میں امن محبت کیلئے اپنی خدمات پیش کرتی رہوں گی۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ میں گزشتہ کئی سالوں سے میوزک سے وابستہ ہوں اپنے شوق سے جنون کی حد تک محبت ہے، میں نے فن موسیقی کی تربیت معروف بالی وڈ گلوکار استاد کمار سانو سے حاصل کی-پاکستانی میوزک اور سنگرز کو دنیا بھر میں الگ پہچان حاصل ہے یہی وجہ ہے استاد مہندی حسن، نصرت فتح علی خان، ملکہ ترنم نور جہاں،استاد سلامت علی خان سمیت دیگر کی دنیا میں آج بھی الگ پہچان ہے جب کہ موجودہ دور کی بات کی جائے تو راحت فتح علی خان، عاطف اسلم، سجاد علی اور عابدہ پروین نے اپنا نام کا ڈنکا بجایا ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ میں اپنا پہلا البم ’’ڈی ورشن‘‘ تیار کر رہی ہوں جو آخری مراحل میں ہے اس البم میں سے ایک گانے’’سونی اے‘‘ جس کی ویڈیو تیار کرلی گئی ہے، اس کو پاکستان بھارت اور دبئی سمیت دنیا بھر میں ریلیز کیا جائے گا۔