وزیراعظم نے فاٹا اصلاحات عملدرآمد کمیٹی کا اجلاس سات مئی کو طلب کرلیا

جمعرات مئی 13:38

وزیراعظم نے فاٹا اصلاحات عملدرآمد کمیٹی کا اجلاس سات مئی کو طلب کرلیا
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 مئی2018ء) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے فاٹا اصلاحات عملدرآمد کمیٹی کا اجلاس 7 مئی کو طلب کرلیا۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ برس 12 ستمبر کو وفاقی کابینہ کے اجلاس میں فاٹا اصلاحات کے حوالے سے اہم پیشرفت ہوئی تھی جس میں حکومت نے ایف سی آر کے خاتمے کیلئے نیا بل لانے کا فیصلہ کیا تھا۔وفاقی حکومت نے 23 ستمبر کو فاٹا میں ملک کے دیگر حصوں کی طرح پولیس اور عدالتی نظام نافذ کرنے کا اعلان کیا جبکہ رواں سال17 اپریل کو صدر مملکت نے سپریم کورٹ اور پشاور ہائیکورٹ کا دائرہ کار فاٹا تک بڑھانے کے بل پر دستخط کیے۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے گزشتہ روز قومی اسمبلی میں اعلان کیا تھا کہ فاٹا کو صوبائی اسمبلی میں نمائندگی دینے کے عمل کا آغاز رواں ماہ مکمل کر لیں گے۔

(جاری ہے)

میڈیا رپورٹ کے مطابق وزیراعظم نے وفاق کے زیر انتظام علاقے فاٹا سے متعلق اصلاحات پر عملدرآمد کمیٹی کا اجلاس طلب کرلیا ہے جو 7 مئی کی شام 4 بجے ہوگا۔۔فاٹا ریفارمز عملدرآمد کمیٹی کے اجلاس میں اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق،، سرتاج عزیز،، خورشید شاہ،، عبدالقادر بلوچ،، نوید قمر، شاہ محمود قریشی اور مولانا فضل الرحمان شریک ہوں گے ،ْ ڈاکٹر فاروق ستار اور آفتاب شیر پاؤ بھی فاٹا ریفارمز سے متعلق اجلاس میں شرکت کریں گے۔۔وزیراعظم نے 16 رکنی کمیٹی کو اجلاس میں شرکت یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے۔