ممتاز دانشور، شاعر اور ماہر تعلیم پروفیسر فضل داد عارف کو سینکڑوں سوگواروں کی موجودگی میں سپردخاک کر دیا گیا

جمعرات مئی 13:55

ہری پور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 مئی2018ء) ممتاز دانشور، شاعر اور ماہر تعلیم پروفیسر فضل داد عارف کو سینکڑوں سوگواروں کی موجودگی میں سپردخاک کر دیا گیا۔ مرحوم کافی عرصہ سے گردوں کے عارضہ میں مبتلا تھے۔ پروفیسر فضل داد عارف مانسہرہ اور بعد ازاں پوسٹ گریجویٹ کالج ہری پور میں طویل عرصہ تک اپنی ذمہ داریاں ادا کرتے رہے۔ چیف پراکٹر اور قائم مقام پرنسپل بھی رہے۔

ڈگری کالج ہری پور کو پوسٹ گریجویٹ کا درجہ دلانے میں ان کا اہم کردار رہا۔ مرحوم کا شمار اعلیٰ درجہ کے نعت اور غزل گو شعراء میں ہوتا تھا تاہم مشاعروں میں جانے اور اپنی زندگی میں مجموعہ کلام منظر عام پر لانے سے گریزاں رہے۔ قبل ازیں آرمی ایجوکیشن کور میں خدمات بھی انجام دیں، آبائی تعلق پنڈوری تھا، علاقہ بھر کے پہلے پوسٹ گریجویٹ کے طور پر جانے جاتے تھے، آج کل کوٹ نجیب الله میں رہائش پذیر تھے۔

(جاری ہے)

کڑنٹاں سکول کیلئے کئی کنال قیمتی اراضی وقف کی تھی جہاں بچے اور بچیاں زیور تعلیم سے آراستہ ہو رہے ہیں۔ سرائے گدائی میں ووکیشنل انسٹیٹیوٹ کی منظوری کیلئے انتھک کوشش کی، پسماندگان میں ایک بیٹا قاضی رضوان احمد سینئر منیجر پی ٹی سی ایل اور ایک بیٹی شامل ہیں۔ علاقہ میں ان کی تعلیمی اور سماجی کاوشیں ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی۔ نماز جنازہ میں ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔

متعلقہ عنوان :