صوبائی وزیر خوراک قلندر لودھی نے نئی حلقہ بندیوں کو پشاور ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا

جمعرات مئی 14:06

ایبٹ آباد۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 مئی2018ء) صوبائی وزیر خوراک قلندر خان لودھی نے نئی حلقہ بندیوں کو پشاور ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا۔

(جاری ہے)

الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے نئی حلقہ بندیوں کی نظرثانی کی اپیلوں پر فیصلہ سناتے ہوئے صوبائی وزیر خوراک قلندر خان لودھی کی آبائی یونین کونسل بانڈہ پیر خان اور شہری یونین کونسل سہلڈ کو حلقہ پی کی37- اور 36 کے ساتھ منسلک کر دیا جس پر صوبائی وزیر خوراک نے شدید احتجاج کرتے ہوئے الیکشن کمیشن سے مطالبہ کیا ہے کہ ان کی آبائی یونین کونسلوں ان کے حلقہ نیابت پی کے 38 کے ساتھ دوبارہ منسلک کیا جائے۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان میں شنوائی نہ ہونے پر صوبائی وزیر خوراک قلندر خان لودھی نے چوہدری اعتزاز احسن کے اسسٹنٹ گوہر علی خان ایڈووکیٹ اور کامران گل ایڈووکیٹ کی وساطت سے پشاور ہائی کورٹ میں یونین کونسل بانڈہ پیر خان اور سلہڈ کو حلقہ پی کے 36 کے ساتھ منسلک کرنے کے خلاف پٹیشن دائر کر دی ہے۔