قیدی نمبر 8 پاکستانی یا بھارتی دوسال بعد بھی تھائی عدالت فیصلہ نہ کرسکی

بھارت اور پاکستان قیدی کی حوالگی کے دعوے دار ،عدم ثبوت پر تھائی عدالت کابھارت کے حوالے کرنے سے انکار

جمعرات مئی 15:20

بینکاک(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 مئی2018ء) تھائی لینڈ کی عدالت گزشتہ دو سال سے بینکاک جیل کے قیدی نمبر آٹھ کے بارے میں طے نہیں کرسکی کہ اس کا تعلق پاکستان سے ہے یا بھارت سی جبکہ بھارت اور پاکستان دونوں ہی اس قیدی کی حوالگی کے دعوے دار ہیں۔۔بھارتی ٹی وی نے بتایاکہ بھارتی پولیس کے ریکارڈ کے مطابق بینکاک جیل میں قیدبھارتی شہری دائود ابراہیم کا قریبی ساتھی ہے اور اسے مدثرحسین سیدعرف منا زنگاڑاکے نام سے شناخت کیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

اٴْس نے 2000ء میں تھائی لینڈ کے دارالحکومت میں چھوٹا راجن پر حملہ کیا تھاجس میں چھوٹا راجن کا ساتھی روہیت ورما ہلاک ہو گیا تھا۔زنگاڑا ممبئی کے علاقے جوگیشواری کا رہاہشی ہے اور مختلف جرائم میں ملوث ہونے کے الزام میں اٴْس کے خلاف 70 سے مقدمات درج ہیں۔۔بھارت کے ان دعووں کے برعکس پاکستانی حکام کا کہناتھا کہ بینکاک کی جیل کا قیدی نمبر8پاکستانی ہے اور اس کا نام محمد سلیم ہے۔ثبوت کے طور پر تھائی لینڈ کی عدالت میں محمد سلیم کا پاکستانی پاسپورٹ، نکاح نامہ اور پاکستان میں اس کے والد کا ڈیتھ سرٹیفیکیٹ بھی پیش کیا گیا ہے۔جس کے بعد عدالت نے اسے بھارتی حکام کے حوالے کرنے سے انکار کر دیاہے۔