توہین عدالت کیس ،دانیال عزیز کے خلاف کیس کا فیصلہ محفوظ

جمعرات مئی 17:42

توہین عدالت کیس ،دانیال عزیز کے خلاف کیس کا فیصلہ محفوظ
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 مئی2018ء) سپریم کورٹ آف پاکستان نے وفاقی وزیر نجکاری دانیال عزیز کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کے دوران فریقین کے دلائل مکمل ہونے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔ جمعرات کو جسٹس عظمت سعید شیخ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے دانیال عزیز کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی۔ عدالت نے کیس کی سماعت کے دوران فریقین کے دلائل مکمل ہونے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔

جسٹس شیخ عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ فیصلہ بعد میں سنایا جائے گا، وکیل استغاثہ اور وکیل صفائی کا شکریہ ادا کرتے ہیں، دانیال عزیز نے بھی اپنا کیس اچھا پیش کیا۔ دانیال عزیز نے بتایا کہ بڑے بڑے عہدوں پر رہا ہوں کوئی الزام نہیں ہے، میں عدالت کی عزت کرتا ہوں توہین کا سوچ بھی نہیں سکتا۔

(جاری ہے)

جسٹس شیخ عظمت سعید نے کہا کہ ہم نے فیصلوں میں لکھا ہے کہ ان فیئر کمنٹس بھی کئے جا سکتے ہیں۔

جسٹس شیخ عظمت سعید نے استفسار کیا کہ دانیال عزیز کی تعلیم کیا ہی وکیل دانیال عزیز نے جواب دیا کہ اکانومسٹ ہیں۔ جسٹس شیخ عظمت سعید نے کہا کہ اکانومسٹ کا کام بولنا نہیں کام کرنا ہوتا ہے۔یاد رہے کہ چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے ٹی وی ٹاک شوز کے دوران دانیال عزیز کے عدلیہ مخالف بیانات پر رواں برس 2 فروری کو توہین عدالت کا ازخودنوٹس لیتے ہوئے بنچ تشکیل دیا تھا۔13 مارچ کو دانیال عزیز پر توہین عدالت کی فرد جرم عائد کی گئی تھی، تاہم انہوں نے صحت جرم سے انکار کردیا تھا۔