لاپتہ افراد کی بازیابی ،سندھ ہائی کورٹ کا پولیس حکام کی کارکردگی پر سخت برہمی کا اظہار

کیا آپ کو لاپتہ ہونے شہریوں کی تکالیف کا احساس نہیں ہوتا،کمرہ عدالت میں موجود حکام سے سندھ ہائی کورٹ کا استفسار

جمعرات مئی 17:55

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 مئی2018ء) سندھ ہائی کورٹ نے پولیس حکام کی کارکردگی پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے انہیں لاپتہ شہریوں کی جلد بازیابی کے لئے اقدامات تیز کرنے کی ہدایت کردی۔جمعرات کو سندھ ہائی کورٹ میں درجنوں لاپتہ افراد کی عدم بازیابی کے خلاف دائر متفرق درخواستوں پر سماعت ہوئی۔دوران سماعت کمرہ عدالت میں لاپتہ شہریوں محمد علی، نعیم عارف نظامی سمیت دیگر کے اہل خانہ کی بڑی تعداد موجود رہی ۔

(جاری ہے)

سماعت کے دوران عدالت کو ریاض احمد نامی درخواست گزار نے بتایا کہ انکے عزیزوں محمد علی،نعیم اور عارف کو 2013 میں پی آئی بی کے علاقے سے قانون نافذ کرنے والے اداروں نے اغوا کیا۔5 سال سے وہ اپنے پیاروں کی تلاش میں ہیں لیکن تاحال اس بات کا علم نہیں ہوسکا کہ وہ کہاں ہیں۔درخواست گزار کا مزید کہنا تھا کہ لاپتہ ہونے والے عزیزوں کی بازیابی کے لئے ان سے پولیس بھی تعاون نہیں کررہی ہے۔دوسری کی جانب عدالت نے پولیس کی کارکردگی پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کمرہ عدالت میں موجود حکام سے استفسار کیا کہ کیا آپ کو لاپتہ ہونے شہریوں کی تکالیف کا احساس نہیں ہوتا۔۔عدالت نے پولیس کو لاپتہ شہریوں کی بازیابی کے لئے اقدامات تیز کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔