سجاول، مجرمانہ سرگرمیوں میں اضافے کے بعد شہریوں کا احتجاج کا اعلان

جمعرات مئی 21:13

سجاول(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 مئی2018ء) ضلع بھر میں مجرمانہ سرگرمیوں میں اضافے کے بعد شہریوں نے احتجاج کا اعلان کیاہے ، ضلع بھر میں ایک سو سے زائد موٹرسائیکلوں گاڑیوں کی چوری اور چھین لئے جانے اور لاکھوں روپے کی ڈکیتیوں اور لوٹ مارکے ملزمان گرفتارنہ ہونے پر دڑو شہرمیں احتجاج کا اعلان کیاگیاہے ، جس کے بعد بھی پولیس نے کاروائی کرنے کے بجائے گزشتہ رات ایس پی کے پی ایس او واجد اور اے ڈی آر سی انچار بھائی خان گولو نے دڑو میں شہریوں سے ملاقات کرکے مہلت طلب کی اور احتجاج نہ کرنے کی اپیل کی جس پر شہریوں نے احتجاج موخر کردیالیکن تاحال کوئی بھی گرفتاری یاسامان کی واپسی نہ ہوسکی ہے ، دڑو کے ایس ایچ او شفیع گولو بھی بدستور موجود ہیں ، ان کی ایام کاری میں یہ وارداتیں ہوئی ہیں، اس سے قبل سجاول اور میرپوربٹھورو میں کئی مرتبہ احتجاج بھی کئے گئے ،جبکہ اسی نااھل افسرکی موجودگی کے دوران وارداتوں اور ملزمان کی عدم گرفتاری پر تین مرتبہ شٹربند ھڑتال بھی کی گئی ہے ،لیکن نامعلوم وجوہات کی بناء پر ملزمان کی گرفتاری کی کوشش نہیں کی جارہی ہے ، ادھر ذرائع کا کہناہے کہ مخصوص طریقے سے ٹارگٹڈ وارداتوں میں پولیس افسران بھی ملوث ہیں ، جن کے خلاف کاروائی نہیں کی جارہی ہے ، علاقے میں وارداتوں کے بعد پولیس تھانے پر رپورٹ درج کرنے سے ہرممکن طورپر گریزاں کیاجارہاہے ، اس طرح تھانے کا ریکارڈ کلیئررکھ کر ملزمان کو تحفظ اور شہریوں کو دربدر کیاجارہاہے ، پولیس کی نااھلی سے ضلع بھر کے شہری اپنی لاکھوں روپے سے محروم ہوتے جارہے ہیں ،مقامی شہریوں نے حکام بالا سے اپیل کی ہے کہ سجاول پولیس میں اصلاحات لائی جائیں اور جرائم میں ملوث افسران کے خلاف تادیبی کاروائی کرکے جرائم پیشہ افرادکو گرفتارکیاجائے اور شہریوں کو اپنی مسروقہ اشیاء واپس دلائی جائیں۔

متعلقہ عنوان :