چین کا گہرے پانیوں میں کھدائی کا پہلا آپریشن

دو کرینوں نے مشترکہ طور پر غوطہ لگا کرتین روزہ مشن مکمل کیا

جمعرات مئی 23:36

ْبیجنگ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 مئی2018ء) چین کی دو زیر آب کھدائی کرنے والی کرینوں نے تین دن مشترکہ آپریشن کیا۔یہ گہرے پانیوں میں کھدائی کا اپنی قسم کا پہلا آپریشن تھا۔جس کا مقصد جنوبی چینی سمندر کے دریائے پرل کے دہانے پر کھدائی کرنا تھا۔ان میں ایک کرین ہیما جسے سمندری گھوڑا کہا جاتا ہے خودکار تھی اور بغیر کسی انسان کے کام کررہی تھی۔

(جاری ہے)

جبکہ دوسری شن ہائی یانگ شی جسے گہرے سمندر کا جنگی ہتھیار کہا جاتا ہے۔ انسان آپریٹ کررہا تھا۔دونوں نے 28سے 30اپریل تک مشترکہ آپریشن کیا۔دونوں گاڑیاں چین میں تیار کردہ تھی۔ اور انہوں نے گہرے سمندر میں کھدائی کے لیے بنیادی ٹیکنالوجی استعمال کی۔انہوں نے اکھٹے تین غوطے لگائے اور وہ جنوبی چینی سمندر میں گہرائی تک سیال مادے تک پہنچی انہوں نے سیال مادے کے نمونے حاصل کیے جن پر اب چینی سیاستدان تجربات کریں گے۔

متعلقہ عنوان :