سعودی عدالت نے داعش میں شمولیت پر 10افراد کو قید بامشقت کی سزا سنا دی

جمعہ مئی 10:30

ریاض۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) سعودی عرب میں قائم فوجداری کی خصوصی عدالت نے دہشت گرد تنظیم داعش میں شمولیت کا الزام ثابت ہوجانے پر 10 سعودی باشندوں کو قید بامشقت کی سزا سنا دی۔ سعودی نشریاتی ادارے کے مطابق فوجداری عدالت نے داعش میں شمولیت پر 10 شہیروں کو قید بامشقت سنادی ،ان میں سے ایک نے سعودی قائدین کو کافر قرار دیا تھا ، داعش اور اس کی دہشت گردانہ سرگرمیوں کی تائید و حمایت کی جسے 13برس قید کی سزا سنائی۔

(جاری ہے)

دوسرے سعودی پر بھی کفر کا فتویٰ جاری کرنے ، داعش کی سرگرمیوں کی تائید و حمایت کرنے اور شام جانے والوں کی سرگرمیوں کو راز رکھنے کے الزامات ثابت ہونے پر 11برس قید ۔ تیسرے کو مذکورہ الزامات پر 13برس ، چوتھے کو داعش سے انتساب پر 4برس، پانچویں کو ملکی نظام اور سماجی آداب کے منافی مواد موبائل میں ذخیرہ کرنے اور جیل کے اندر پابندیوں کا پاس نہ کرنے پر 4برس قید جبکہ چھٹے کو 6 برس اور ساتویں کو11برس ، آٹھویں کو 7سال ، نویں کو 14برس اور دسویں کو 13برس سزا سنائی۔ واضح رہے کہ یہ فیصلہ پرائمری عدالت کا ہے اسے اپیل کورٹ اور پھر سپریم کورٹ میں چیلنج کیا جا سکتا ہے۔