رمضان المبارک میں زائرین حرم کیلئے انتظامات جاری، 10ہزار خدام کی تعیناتی کا فیصلہ

جمعہ مئی 10:30

مکہ مکرمہ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) مسجد الحرام اورمسجد نبوی شریف کی اعلیٰ انتظامیہ نے رمضان المبارک کے دوران زائرین حرم کیلئے 10ہزار سے زیادہ خدام تعینات کر نے کا اعلان کر دیا۔ سعودی اخبار کے مطابق مسجد الحرام اورمسجد نبوی شریف انتظامیہ کے سربراہ اعلیٰ ڈاکٹر عبدالرحمان السدیس نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ رمضان کی تیاریاں کافی پہلے سے کی جارہی تھیں۔

تمام اسکیموں کو حتمی شکل دیدی گئی ہے ۔ زائرین حرم کو 24گھنٹے بہترین خدمات مہیا ہوں گی۔ مطاف ، صفا و مروہ، چھتوں ، تہ خانے ، شاہ فہد اور تیسری سعودی توسیع والے حصوں ، حرم شریف اور اس کے صحنوں وغیرہ میں مطلوبہ خدمات 24گھنٹے مہیا ہوں گی۔ رمضان میں حرم شریف کے 210۔ مسجد نبوی کے 100 دروازے ، حرم شریف کے 28 الیکٹرانک زینے، مسجد نبوی کے 4 الیکٹرانک زینے، معذوروں کی آمدورفت کے لئے 38راستے، خواتین کے لئے 7دروازے کھلے جائیں گے۔

(جاری ہے)

حرم شریف میں آب زم زم کی سبیلیں، مسجد نبوی میں 60، حرم شریف میں زم زم کی25ہزار کولر اور مسجد نبوی شریف میں 23ہزار ہوں گے۔زائرین کو 10ہزار عام وہیل چیئر اور بیٹری سے چلنے والی 700چیئرز مہیا ہوں گی۔ ڈاکٹر السدیس نے بتایا کہ حرمین شریفین میں ممتاز علماء اور اساتذہ دینی درس دیں گے۔ قرآن پاک کے نسخے ، دینی کتابچے مختلف زبانوں میں حرمین شریفین میں جمعہ کے خطبات کے ترجمے تقسیم کئے جائیں گے۔

بزرگ معتمرین اورزائرین کی سہولت کے لئے گولف گاڑیاں ہوں گی۔ السدیس نے اطمینان دلایا کہ حرمین شریفین کے دالانوں او رراہداریوں میں زائرین کا استقبال خوشبویات سے کیا جائے گا۔ انھوں نے مزید بتایا کہ اب ایک گھنٹے میں ایک لاکھ 7ہزار افراد طواف کر سکیں گے۔ تیسری سعودی توسیع کے 80 فیصد حصے سے استفادہ کیا جائے گا۔ حرم شریف کے صحنوں میں موسم خوشگوار رکھنے کے لئے 600پنکھے نصب کر دیئے گئے ہیں۔