داعش تنظیم کا سربراہ ابھی تک زندہ ہے، البغدادی کے مقرّب کا انکشاف

داعش کی نگرانی کرنے والی جنرل کمیٹی کے رکن سمیت کئی عہدوں پر کام کیا،گرفتارملزم کی گفتگو

جمعہ مئی 12:26

بغداد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) عراق میں سپریم جوڈیشل کونسل نے اعلان کیا ہے کہ تحقیقات کی مرکزی عدالت نے داعش تنظیم کے سربراہ ابوبکر البغدادی کے ایک مقرّب دہشت گرد کے اعترافات کا اندراج کیا ہے۔۔جرمن ریڈیو کے مطابق کونسل کے سرکاری ترجمان بیرسٹر عبدالستار بیرقدار نے بتایا کہ داعش تنظیم سے تعلق رکھنے والے اس ملزم کا دعوی ہے کہ وہ گزشتہ جولائی تک البغدادی کے ساتھ مسلسل اور براہ راست ملاقاتیں کرتا رہا۔

(جاری ہے)

بیرقدار کے مطابق ملزم نے اپنے اعتراف میں بتایا کہ اس نے داعش کی نگرانی کرنے والی جنرل کمیٹی کے رکن سمیت کئی عہدوں پر کام کیا۔ بیرقدار نے بتایا کہ مذکورہ ملزم کی گرفتاری ترکی میں عمل میں آئی اور اس میں عراقی انٹیلی جنس اور ترک سکیورٹی اداروں کی کوششیں شامل رہیں۔۔داعش کے سربراہ البغدادی کے حالیہ مقام کے بارے میں متضاد معلومات ہیں۔ امریکی ماہرین اور انٹیلی جنس نے خبردار کیا ہے کہ شام اور عراق میں داعش پر عسکری طور سے قابو پانے کے باوجود تنظیم اب بھی ایک بڑا خطرہ ہے۔ توقع ہے کہ داعش دنیا کے مختلف ممالک میں نئے حملے کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔