سزا کے حقداروں کو بری اور بے گناہ پیشیاں بھگت رہے ہیں ،نواز شریف

جمعہ مئی 15:52

سزا کے حقداروں کو بری اور بے گناہ پیشیاں بھگت رہے ہیں ،نواز شریف
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) سابق وزیر اعظم و مسلم لیگ ن کے تاحیات قائد نواز شریف نے کہا ہے کہ جن کو سزا ملنی چاہئے وہ بری ہورہے ہیں اور جن کو بری ہونا چاہیے اور پشیاں بھگت رہے ہیں عمران خان عوام کے انگوٹھوں کو چھوڑ کر امپائر کے انگلی پر انحصار کررہے ہیں ہم الیکشن میں ایک ماہ تو کیا ایک دن یا ایک گھڑی بھی تاخیر برداشت نہیں کریں گے مجھے اپنی بیمار بیوی کی مزاج پرسی کے لئے جانے کی اجازت نہیں دی گئی اور عمران خان پیش بھی نہیں ہوئے ، انہیں بری کردیا گیا۔

(جاری ہے)

احتساب عدالت کے باہر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے اندر صاف اور شفاف الیکشن کروانے والوں کے نعروں پر اعتماد نہیں رہا کیونکہ ساف اور شفاف الیکشن کے نعرے لگانے والے کبھی بھی شفاف الیکشن نہیں کرواسکتے انہوں نے کہا کہ عمران خان نے الیکشن میں تاخیر کی بات لاہورجلسے کے بعد کی کیونکہ انہیں لاہور میں عوام نے مسترد کردیا عمران خان امپائر کی انگلی پر انحصار کر بیٹھے تھے اور عوام کے انگوٹھوں پریقین نہیں تھا کیونکہ ان کو پتہ ہے کہ یہ انگوٹھے ان کے حق میں نہیں لگتے اس لیے انہوں نے الیکشن میں ایک سے ڈیڑھ ماہ کی تاخیر کی بات کی لیکن میں عمران خان کو بتا دینا چاہتا ہوں کہ ہم الیکشن میں ایک ماہ تو کیا ایک دن اور ایک منٹ کی بھی تاخیر برداشت نہیں کریں گے انہوں نے مزید کہا کہ کسی نے ہمارے خلاف کرپشن کا کوئی الزام، بیان اور نہ دستاویزی ثبوت پیش کیا، مگر نیب کی 61 پیشیاں بھگت چکے ہیںہم پر کیس چلارہا ہے نہ جانے کیا فیصلہ ہونے والا ہے ایک سوال کے جواب میں نواز شریف نے کہا ہے کہ اچھی شہرت کے حامل پولیس افسر عصمت اللہ جنجوعہ کے ساتھ مارپیٹ کی گئی پولیس افسر کے ساتھ تشدد کرنے والے کو بری کیا جائے گا تو پیغام کیا جائے گا