آزادکشمیر کے نوجوانوں میں اچھا کھیلنے کی صلاحیت موجود ہے،کے ایس ایل سے آزادکشمیر کو مرکزی دھارے میں لانے میں مدد ملے گی ،صدر آزاد جموں و کشمیر سردار مسعود خان کاکشمیر سپر لیگ کی افتتاح کے موقع پر اظہار

جمعہ مئی 16:19

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) صدر آزاد جموں و کشمیر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ آزادکشمیر کے نوجوانوں میں اچھا کھیلنے کی صلاحیت موجود ہے۔صدر آزادجموں و کشمیر نے ان خیالات کا اظہار مظفرآباد میں کشمیر سپر لیگ (کے ایس ایل)کی افتتاحی تقریب میں شرکت کرتے ہوئے کیا۔ صدر نے اس موقع پر کشمیر سپر لیگ کی ٹیم کو آزادکشمیر میں کرکٹ کے فروغ کے لئے اٹھائے گئے اقدامات پر مبارکباد دی ۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر سپر لیگ اس علاقے کے کھلاڑیوں کو اپنی صلاحیتیں بروئے کار لانے میں معاون ثابت ہو گی۔ صدر مسعود خان نے کہاکہ آج جشن کا دن ہے کیونکہ آج کے ایس ایل کا آغاز ہو رہا ہے اسے آزادکشمیر کو پاکستان کی کھیلوں کے مرکزی دھارے میں مدد ملے گی ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ اس ٹورنامنٹ کے کھلاڑیوں کو لازمی حوصلہ افزائی ملے گی اور پاکستان بھر میں کھلاڑیوں کے سلیکٹرز کو ہمارے مقامی ہونہار کھلاڑیوں کے انتخاب کے مواقع ملیں گے ۔

صدر آزادجموں وکشمیر نے کہا ہے کہ وزیر سپورٹس آزاد کشمیر چوہدری محمد سعید نے آزادجموں و کشمیر میں کھیلوں کے فروغ دینے میں بہت اہم کردار ادا کیا ہے ۔انہوں نے کہا وزیر موصوف نے آزادکشمیر میں کھیلوں کے فروغ کے سلسلے میں پاکستان میں دیگر کھیلوں کی ایسوسی ایشنز کے ساتھ تعلقات قائم کئے ہیں تاکہ آزادکشمیر کے نوجوانوں کوکھیلوں کے میدان میں اپنی صلاحیتں اجاگر کرنے کے مواقع مل سکیں۔

صدر نے کہا کہ آزادکشمیر کے نوجوانوں میں اچھا کھیلنے کی بے پناہ صلاحیت موجود ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ مناسب تربیت اور کھیلوں کے مواقع فراہم کئے جانے سے نوجوانوں کے اندر چھپی صلاحیتوں کو نکھارنے میں مدد ملتی ہے جس طرح کہ راولاکوٹ کے سلمان ارشاد کو لاہو رقلندر کی جانب سے کھیلنے کے لئے منتخب کیا گیا ہے اور اس علاقے سے تربیت کے ساتھ پی ایس ایل کے لئے ہم سینکڑوں سلمان ارشاد پیدا کر سکتے ہیں ۔

ہمارے نوجوانوں میں کرکٹ کھیلنے کی عمدہ صلاحیت موجود ہے۔کھیلوں کی سرگرمیوں کی اہمیت نمایاں کرتے ہوئے صدر نے کہا کہ کھیل نوجوانوں کی فلاح و بہبود اور ذہنی نشوونما میںاہم کردار ادا کرتا ہے اور کھیل نوجوانوں کو منفی اور غیر صحتمندانہ سرگرمیوں سے بھی بچاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ کھیلوں سے نوجوانوں میں ٹیم ورک ، اعتماد ، نظم و ضبط اور وقت کی پابندی جیسے مثبت اوصاف پیدا ہوتے ہیں ۔

انہوں نے مزید کہا کہ کامیاب ملکوں نے کھیلوں کے میدان میں بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری کی ہے اور ہم بھی آزادکشمیر میں اسی طرح کے اقدامات اُٹھائیں گے۔صدر سردار مسعود خان نے آزادجموں و کشمیر کے لوگوں کو مبارکباد دی اور سرینگر فائیٹرز کے نام پر ایک ٹیم تشکل دینے پر منتظمین کی تعریف کی۔ انہوں نے کہا کہ کے ایس ایل ایک اہم پیش رفت ہے ۔

جس سے آزادکشمیر کی آمدنی میں اضافہ ہو گا ، یہ سیاحوں کے لئے کشش کا باعث ہو گی۔ہوٹلز، ریسٹورنٹس ، اشتہارات ، الیکٹرانک و پرنٹ میڈیا اور مقامی صنعتوں کے لئے بھی سود مند ہو گی ۔صدر آزادجموں و کشمیر نے کے ایس ایل کے آغاز کو سراہا اور کہا کہ اس لیگ سے آزاد کشمیر کے عوام کی آزادی اور ہمارے اتحاد کا مثبت پیغام بھارت کو جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس موقع پرہمیں مقبوضہ کشمیر کے اپنے مظلوم بہن بھائیوں کو نہیں بھولنا چاہیے جو بھارت کے بدترین مظالم اور ریاستی دہشت گردی کا شکار ہیں ، جنہیں سر عام قتل کی جا رہا ہے بیلٹ گنوں سے انہیں نا بینا اور معذور کیا جا رہا ہے ، انہیں غیر قانونی طور پر قید و بند کیا جا رہا ہے ہمیں ان کی آواز کو عالمی برادری تک پہنچانا چاہیے تاکہ انہیں بھی حق خوداریت مل سکے۔

چوہدری محمدسعید وزیر کھیل نے اپنے خطاب میں کے ایس ایل کی کامیابی کے لئے اپنی وزارت اور حکومت کی جانب سے مکمل حمایت کا یقین دلایا اور کہا کہ حکومت کھیلوں کی سرگرمیوں کو فروغ دینے کے لئے آزادکشمیر میں بڑے پیمانے پر کھیلوں کے مقابلے کروانے کا ارادہ رکھتی ہے۔صدر سردار مسعود خان نے چوہدری محمد سعید وزیر سپورٹس کرکٹ لیجنڈ ثقلین مشتاق (مشیر کے ایس ایل) اور منتظمین نے لیگ کے سرکاری لوگو کا اعلان کیا ۔

کے ایس ایل آزادکشمیر کی پہلی لیگ ہے جس میں ابتدائی طور پر (6)چھ ٹیمیں شامل ہیں جو’ ٹی 20‘ کی شکل میں کھیلیں گی۔پورے آزادکشمیر اور پاکستان سے کھلاڑی اس ٹورنامنٹ میں حصہ لیں گے اور یہ کھلاڑیوں کے لئے بین الاقوامی سطح پر کھیلنے کے لئے تربیتی گراونڈ ہو گا۔ تقریب میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری جنرل فرحت علی میر ،سابق ڈپٹی سپیکرآزاد جموں وکشمیرقانون ساز اسمبلی شاہین کوثر ڈار ،سیکرٹری سپورٹس راجہ الیاس اور دیگر شائقین کرکٹ بھی کثیر تعداد میں شامل تھے۔