سعودی ضد کے آگے امریکہ نے گھٹنے ٹیک دئیے، سعودی ویمنی سرحد پر امریکی کمانڈوز

تعینات،نیویارک ٹائمز کمانڈوزتعیناتی کا مقصد بیلیسٹک میزائلوں کی فضا میں نشاندہی اور تباہ کرنا ہے ،امریکا جنگی مشن میں شامل ہوئے بغیر سعودی سرحد کی حفاظت کرے گا،ترجمانپینٹاگون میجر ایڈریان رینکینے گالووے

جمعہ مئی 18:14

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) سعودی ضد کے آگے امریکہ نے گھٹنے ٹیک دئیے، سعودی اور یمنی سرحد پر امریکی کمانڈوز تعینات کر دئے گئے،کمانڈوزتعیناتی کا مقصد بیلیسٹک میزائلوں کی فضا میں نشاندہی اور تباہ کرنا ہیامریکا جنگی مشن میں شامل ہوئے بغیر سعودی سرحد کیحفاظت کرے گا۔معروف امریکی اخبار نیویارک ٹائمزمیں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب اور یمن کی سرحد پر امریکی کمانڈوز متعین کیے گئے ہیں۔

(جاری ہے)

ان امریکی کمانڈوز کا بنیادی مقصد یمن کے حوثی ملیشیا کی جانب سے داغے جانے والے بیلیسٹک میزائلوں کی فضا میں نشاندہی اور تباہ کرنا ہے۔ اخبار نیویارک ٹائمز کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ امریکی کمانڈوز گزشتہ برس سعودی سرحد پر تعینات کیے گئے تھے۔ اخبار نے یہ رپورٹ امریکی ذرائع اور یورپی سفارت کاروں کی معلومات پر جاری کی ہے۔ پینٹاگون کے ترجمان میجر ایڈریان رینکینے گالووے نے کہا ہے کہ امریکا جنگی مشن میں شامل ہوئے بغیر معلومات کے تبادلے پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہے اور اس کا مقصد سعودی عرب کی سرحد کو محفوظ بنانا ہے۔