مخالفین ایم کیو ایم کو توڑنے اور ختم کرنے کی سازش کررہے ہیں، عامر خان

پیپلزپارٹی کی حکومت 10 سال سے ہے کراچی کے لیے کیا کام کئی رہنما ایم کیو ایم کی میڈیا سے گفتگو

جمعہ مئی 21:55

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما عامر خان نے کہا ہے کہ ہم سب کو مل کر ایم کیو کو مضبوط کرنا ہوگا، مخالفین ایم کیو ایم کو توڑنے اور ختم کرنے کی سازش کررہے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، عامر خان نے کہا کہ سندھ میں کیا کارکردگی دکھائی پیپلزپارٹی کو جواب دینا چاہئے، پیپلزپارٹی کی حکومت 10 سال سے ہے کراچی کے لیے کیا کام کئی کراچی اور سندھ میں تباہی کی ذمہ دار پیپلزپارٹی ہے۔

ایم کیو ایم رہنما نے کہا کہ 5 فروری کو جو صورتحال سامنے آئی وہ تکلیف دہ تھی، پہلے دن سے کوشش تھی فاروق ستار سے بات کریں، ہماری کوشش تھی فاروق ستار آئیں اور پارٹی چلائیں، ان کے آنے سے دنیا میں مثبت پیغام گیا ہے۔

(جاری ہے)

عامر خان نے کہا ک ایم کیو ایم چھوڑ کر جانے والوں سے پارٹی کو کوئی نقصان نہیں پہنچا ہے، ایم کیو ایم الیکشن میں پی ایس پی کو اپنا مدمقابل نہیں سمجھتی، پی ایس پی پہلی جماعت ہے جس کے پاس بغیر الیکشن لڑے 17 ایم پی اے ہیں، کراچی کے عوام پاک سرزمین پارٹی کو ایک سیٹ بھی نہیں دے گی۔

انہوں نے کہا کہ کامران ٹیسوری کو ٹکٹ دینے سے متعلق فیصلہ رابطہ کمیٹی کا تھا، ان کی جانب سے حالیہ بیان نامناسب ہیں، ٹیسوری کو میڈیا پر اس طرح کے تبصرے نہیں کرنے چاہئیں، پی آئی بی اور بہادر آباد کے لوگ سب ایک ہیں، ہمیں ماضی کی باتوں کو بھول کر آگے بڑھنا چاہئے۔عامر خان نے کہا کہ جب بھی الیکشن آتے ہیں ایم کیو ایم کو دبا کا سامنا کرنا پڑتا ہے، الیکشن سے پہلے تاثر دیا جاتا ہے کہ ایم کیو ایم تقسیم ہورہی ہے، کل کے جلسے میں دکھائیں گے ایم کیو ایم کتنی مضبوط ہے، ایم کیو اییم پاکستان الیکشن میں پتنگ کے نشان پر اونچی اڑان اڑے گی۔