اوای سی کو اپنے پائوںپر کھڑا کردیا ،اب او پی ایف کی باری ہے ،ڈاکٹر عامر شیخ

کرپشن سے پاک ادارہ میرا خواب ہے ،کالی بھیڑوں کیخلاف سخت تادیبی کارروائی ہوگی او پی ایف ہر سال 20کروڑ روپے کے نقصان کی جانب جاری رہی ہے، چند ماہ میں خسارے پر قابو پانے کے لئے اہم اقدامات کیے جائیں گے ْ آزاد صحافت اگر میرا محاسبہ کرے گی تو میں ادارے کو ٹھیک کرنے کی کوشش کروں گا،خصوصی گفتگو

جمعہ مئی 21:25

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) اوورسیز پاکستانیز فائونڈیشن کے منیجنگ ڈائریکٹر ڈاکٹر عامر شیخ نے کہا ہے کہ او ای سی کو اپنے پائوں پر کھڑا کردیا اب او پی ایف کی باری ہے ، کرپشن سے پاک ادارہ میرا خواب ہے ، او پی ایف ہر سال 20کروڑ روپے کے نقصان کی جانب جاری رہی ہے، چند ماہ میں خسارے پر قابو پانے کے لئے اہم اقدامات کیے جائیں گے ، آزاد صحافت اگر میرا محاسبہ کرے گی تو میں ادارے کو ٹھیک کرنے کی کوشش کروں گا۔

او پی ایف میں موجود کالی بھیڑوں کے خلاف تادیبی کارروائی کا ذہن بن چکا ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز ایک خصوصی گفتگو کے دوران کیا ۔۔ڈاکٹر عامر شیخ نے کہا کہ او ای سی ملازمین کے مسائل سے بخوبی آگاہ ہیں اور ان کی تنخواہوں کا پیسہ اکٹھا کرنا بھی ادارے کے لئے مسئلہ تھا تاہم کوریا کی جانب سے ہزاروں افراد باہر بھجوانے کا ٹاسک ملا تو اس پر میں نے فوری طور پر چار لاکھ روپے کے موبائل صارفین کو مسیج کروائے جس کی پاداش میں کوریا کی جانب سے مطلوبہ ہدف دنوں میں پورا ہو گیا جس سے پانچ کروڑ 90لاکھ کا ریونیو اکٹھا ہوا ہے ۔

(جاری ہے)

علاوہ ازیں کوریا کیساتھ ایک ایسا معاہدہ بھی طے پایا ہے کیونکہ ہر سال 28سے 29فیصد کوٹہ بڑھائیںگے جس سے او ای سی کی انکم میں بالترتیب اضافہ ہوتا چلا جائے گا ۔انہوں نے کہاکہ او ای سی ملازمین کو موجودہ تنخواہیں دینا مشکل تھا تو پرانے بقایا جات ان کے کیسے کلیئر کرتے ۔تاہم آمدہ بورڈ اجلاس میں جو کہ چند دنوں میں متوقع ہے اس میں فیصلہ کرلیا جائے گا کہ ان کے 2017ء میں بڑھائی جانیوالی تنخواہیں ادا کی جائیں۔

ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ ڈپوٹیشن پر درجن سے زائد ملازمین کو اس لئے بھیجوایا گیا تاکہ ادارے پر زیادہ بوجھ نہ بڑھے ۔علاوہ ازیں او ای سی کیلئے او پی ایف طرز پر200روپے فی ویزہ کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے جس سے کروڑوں روپے سالانہ انکم حاصل ہوگی اور پھر ادارہ کسی صورت خسارے کی جانب نہ بڑھ سکے گا ۔دوسری جانب او پی ایف سے متعلق انہوں نے کہاکہ او پی ایف ہر سال 20کروڑ روپے نقصان کی جانب جارہا ہے اور میری کوشش ہو گی کہ چندماہ کے اندر خسارے کو پورا کرکے ادارے کو منافق بخش بنایا جائے ،،ڈاکٹر عامر شیخ کا کہنا تھا کہ آزاد میڈیا کی نہ صرف حمایت کرتے ہیں بلکہ ان کی تنقید کو برائے اصلاح سمجھ کر اقدامات بھی اٹھائے جاتے ہیں ۔

آزاد میڈیا جب تک میرے خلاف نہیں لکھے گا تو میں ادارے کو ٹھیک کرنے کی جستجو نہیں کرسکوں گا ۔خامیوں کی نشاندہی ٹھیک وقت پر ہوتی رہی تو ادارے کو نقصان پہنچانے والے کالی بھیڑوں کا جلد خاتمہ کردیا جائے گا ۔انہوں نے کہاکہ جعلی ڈگری ہولڈر ہوں یا سفارشی بھرتیاں نالائق لوگ ہمیشہ نالائقی کا طوق اپنے گھر میں ڈال کر ملک و قوم کے لئے نقصان دہ ہوتے ہیں ۔او پی ایف خوشحال ہو گا تو ورکر خوشحال ہوگا ۔ظفر ملک