تحریک انصاف کی راولپنڈی میں غیر اعلانیہ انتخابی سرگرمیوں کا آغاز ، مسلم لیگ ن کی اہم وکٹ اڑا دی

سابق رکن صوبائی اسمبلی شہر یاریاض تحریک انساف میں باقاعدہ شمولیت اختیار کر لی

جمعہ مئی 23:53

راولپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) پاکستان تحریک انصاف نے راولپنڈی میں غیر اعلانیہ انتخابی سرگرمیوں کے آغاز میں مسلم لیگ ن راولپنڈی کی ایک اہم وکٹ حاصل کر لی ممتاز مسلم لیگی بابو ریاض (مرحوم)کے صاحبزادے وسابق رکن صوبائی اسمبلی شہر یاریاض تحریک انساف میں باقاعدہ شمولیت اختیار کر لی شہریار ریاض نے تحریک انصاف میں باضابطہ شمولیت بنی گالہ میں تحریک انصاف کے چیئر مین عمران خان سے ملاقات کے بعد کی شہر یار ریا ض کے والد کا شمار شہر کے ممتاز سیاستدانوں میں ہوتا تھاشہر یار ریاض 2008 کے الیکشن میں ن لیگ کے ٹکٹ پر سابقہ پی پی 12 سے رکن صوبائی اسمبلی منتخب ہوئے اور معدنیات و قدرتی وسائل کی قائمہ کمیٹی کے چیئر مین بھی رہے راولپنڈی کے سیاسی حلقوں کے مطابق شہر یار ریاض کے پارٹی چھوڑنے سے ن لیگ کو این اے 62 اور صوبائی اسمبلی کے 3 حلقوں میں نقصان پہنچنے کا خدشہ ہے شہر یار ریاض کے فیصلے سے راولپنڈی کی سیاست میں ایک نئی بحث چھڑ گئی ہے اور سیاسی کارکنان شہر یار ریاض کے اس فیصلے کومسلم لیگ ن راولپنڈی کی ناقص پالیسیوں کا نتیجہ قرار دے رہے ہیں ادھر شہر یار ریاض نے رابطہ کرنے پر آن لائن کو بتایا کہ کہ چونکہ مسلم لیگ ن اب عوامی سیاست اور خدمت کے منشور سے ہٹ چکی تھی راولپنڈی میں پارٹی لٹیروں اور ڈکیتوں کے ہاتھ میں یرغمال بنی ہوئی تھی جس کے لئے ہم نے کئی مرتبہ نشاندہی کی لیکن کسی نے ہماری بات نہیں سنی جس کے بعد یہ واضح ہو گیا تھا کہ ہمارے جیسے لوگ اب مسلم لیگ ن کے ساتھ نہیں چل سکتے جس کے لئے میں نے مکمل غور وفکر کے بعد اپنا راستہ چن لیا انہوں نے کہا کہ 2008سی2013تک کے 5سال کے دوران رکن صوبائی اسمبلی کی حیثیت سے میں نے شہر اور عوام کی جو خدمت کی وہ آج بھی ریکارڈ پر ہے ہم نے کبھی پارٹی کو ذاتی مفادات کے لئے استعمال نہیں کیا بلکہ اپنی جیب سے خرچ کر کے حلقے کے عوام کی خدمت کی اور اسی خدمت کے جذبے کو پروان چڑھانے کے لئے نئے راستے کا تعین کیا کیونکہ عمران خان ایک طویل عرصے سے کرپشن فری پاکستان کی جدوجہد کر رہے ہیں اور میں یہ سمجھتا ہوں کہ اس وقت پوری قوم کو عمران خان کی حمائیت کرنی چاہئے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ میں بھی قومی اسمبلی کے نئے حلقہ این ای62اور صوبائی حلقہ پی پی 18سے امیدوار ہوں تاہم اس حوالے سے عمران خان جو فیصلہ کریں گے اسے ترجیح دی جائے گی ۔