سعودی خواتین کو ڈرائیونگ لائسنس کے حصول کے لیے خصوصی رعایت

بین الاقوامی ڈرائیونگ لائسنس یافتہ خواتین سعودی ڈرائیونگ لائسنس بغیر ٹریننگ کے حاصل کر سکتی ہیں

Sadia Abbas سعدیہ عباس ہفتہ مئی 14:12

سعودی خواتین کو ڈرائیونگ لائسنس کے حصول کے لیے خصوصی رعایت
ریاض(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 05 مئی 2018ء) سعودی محکمہ ٹریفک نے جون 2018 میں خواتین کو ڈرائیونگ کی اجازت کے شاہی فرمان پر علمداری کے لیے ایک خصوصی رعایت دے دی ۔ مزید تفصیلات کے مطابق سعودی محکمہ ٹریفک نے اعلامیہ جاری کیا ہے کہ جن سعودی خواتین کے پاس بین الاقوامی ڈرائیونگ لائسنس موجود ہے وہ بین الاقوامی ڈرائیونگ لائسنس دکھا کر بغیر ٹریننگ کے سعودی ڈرائیونگ لائسنس حاصل کر سکتی ہیں ۔

محکمہ ٹریفک کے ڈائریکٹر میجر جنرل محمد البسامی نے سعودی خواتین کو یقین دلایا ہے کہ سعودی عرب میں خواتین کی ڈرائیونگ سے متعلق تمام انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔ بعض سعودی جامعات کے تعاون سے خواتین کو ڈرائیونگ سکھانے والے ماڈل اسکول بھی شروع کر دیئے گئے ہیں ۔ جنرل محمد البسامی نے مزید بتایا کہ ریاست بھر میں 21 ڈرائیونگ سینٹرز قائم کر دئیے گئے ہیں جہاں بین الاقوامی لائسنس یافتہ سعودی خواتین اپنا غیر ملکی ڈرائیونگ لائسنس دکھا کر سعودی ڈرائیونگ لائسنس حاصل کر سکتی ہیں ۔

(جاری ہے)

یہ سینٹر سعودی عرب میں مختلف شہروں ریاض ، دمام ، الاحسائ، الجبیل، بریدہ، عنیزہ، حائل، تبوک، جدہ ، طائف، مکہ مکرمہ، مدینہ منوہ، ابھا ئ، عرعر، جیزان، نجران، الواحہ، القریات اور سکاکا میں قائم کئے گئے ہیں۔ تاہم جنرل محمد البسامی کا کہنا ہے کہ غیر ملکی ڈرائیونگ لائسنس کی اصلیت کا پتہ لگانے کے لیے ڈرائیونگ لائسنس یافتہ خواتین کا ڈرائیونگ کا امتحان لیا جائے گا ، جس میں خواتین کی ڈرائیونگ میں مہارت کو جانچا جائے گا اور پھر سعودی ڈرائیونگ لائسنس فراہم کیا جائے گا۔ البسامی نے کہا کہ انٹرنیشنل یا غیر ملکی ڈرائیونگ لائسنس کی جگہ سعودی لائسنس اسی صورت میں دیا جائے گا جبکہ خاتون کو ڈرائیونگ آتی ہوگی بصورت دیگر لائسنس جاری نہیں کیا جائے گا ۔