رمضان سولنگی نے کرپشن میں ملوث افسران کے نام بتا دیے

ڈی ایم سیز محکمہ بلدیات کو ماہانہ کروڑوں روپے بھتا دیتی ہیں، سندھ کی ہر ڈسٹرکٹ کونسل اور میونسپل کمیٹی سے ماہانہ لاکھوں روپے آتے ہیں،ٹی ایم او، انجینئر اور اکائونٹنٹ ایم پی ایز کی سفارش پر لگائے جاتے ہیں، سیکریٹری بلدیات سندھ کے پرسنل سیکرٹری کے دوران تفتیش انکشافات

ہفتہ مئی 15:10

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) سیکریٹری بلدیات سندھ کے پرسنل سیکریٹری رمضان سولنگی نے دوران تفتیش زبان کھول دی۔ ان کا کہنا ہے کہ ڈی ایم سیز محکمہ بلدیات کو ماہانہ کروڑوں روپے بھتا دیتی ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق نیب کی زیرِ حراست رمضان سولنگی نے محکمہ بلدیات میں ہونے والی کرپشن میں ملوث اہم افراد کے نام بتادیے ہیں۔اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ ڈی ایم سی جنوبی سے ہر ماہ ایک کروڑ روپے آتے ہیں، ڈی ایم سی ویسٹ سے ماہانہ ساڑھے تین کروڑ روپے جمع کرائے جاتے ہیں ، سندھ کی ہر ڈسٹرکٹ کونسل اور میونسپل کمیٹی سے ماہانہ لاکھوں روپے آتے ہیں۔

رمضان سولنگی نے کہا کہ وزیر بلدیات کے فرنٹ مین کے نام پر مختلف کاغذی کمپنیاں قائم ہیں۔ ٹی ایم او، انجینئر اور اکائونٹنٹ ایم پی ایز کی سفارش پر لگائے جاتے ہیں۔

(جاری ہے)

افسران کی تعیناتی لوکل گورنمنٹ بورڈ کے سیکریٹری انیس دستی کے ذمے تھی جنہیں حال ہی میں ڈی سی حیدرآباد تعینات کیا گیا ہے ، وزیر بلدیات نے انیس دستی کو اہم ٹاسک دے کر حیدرآباد بھیجا ہے۔یاد رہے رمضان سولنگی کو نیب نے 19 اپریل کو حراست میں لیا تھا۔ ملزم کے گھر سے تین کروڑ 15 لاکھ مالیت کی نقد ملکی وغیر ملکی کرنسی، 18 لاکھ 43 ہزار کے پرائز بانڈ،، 100تولے سونے کی سلاخیں، زیورات، قیمتی گھڑیاں اور دوسرا قیمتی سازوسامان برآمد ہوا تھا۔

متعلقہ عنوان :