محبوس حریت قائدین اور کارکنوں کی حالت زار تشویشناک ہے ، سید علی گیلانی

قوم کو پوری یکسوئی ، اتحادو اتفاق اور صبر کے ساتھ بھارت کی بربریت ، جارحیت اور فسطائیت کے خلاف صف آرا ہونے کی ضرو رت ہے ، بیان

ہفتہ مئی 15:10

سرینگر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) کل جماعتی حریت کانفرنس’’’گ‘‘ گروپ کے چیئرمین سید علی گیلانی نے اپنی مظلوم و مقہور قوم کے نام ایک پیغام میں کہا ہے کہ ہمیں پوری یکسوئی ، اتحاد و اتفاق اور صبرو ثبات کے ساتھ بھارت کی بربریت ، جارحیت اور فسطائیت کے خلاف صف آرا ہونے کی اشد ضرورت ہے۔ اپنے ایک بیان میں حریت راہنما نے بھارت کے سامراجی اور توسیع پسندانہ عزائم کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کی افواج اور نیم فوجی دستوں کی طرف سے جموں و کشمیر کی سرزمین پر نہتے لوگوں کے علاوہ کم سن معصوم طلباء کے خلاف بھی قتل و غارت گری کا بازار گرم کر رکھا ہے جس کی مثال دنیا بھر میں کہیں اور نہیں مل سکتی ۔

حریت چیئرمین نے معصوم عوام کے خلاف بھارت کی طرف سے ظلم و جبر اور پرتشدد کارروائیوں کی شدید ترین الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ تاریخ شاہد ہے کہ غاصب اور جابر حکمرانوں کو ایک مظلوم قوم کے صالح کردار ، نظم و ضبط اور صبر وثبات کے مقابلے میں بدترین شکستوں کا سامنا کرنا پڑا ہے حریت راہنما نے بالخصوص اپنی قوم کی نوجوان نسل سے دردمندانہ اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ بھارت کی جارحیت اور بربریت کا مقابلہ کرنے کے لئے اپنے اندر قرآن و سنت کی روشنی میں ایک صالح کردار ادا کریں ۔

(جاری ہے)

انہوں نے انسانی حقوق کے عالمی اداروں سے جموں وکشمیر کے اسیران زندان کے حوالے سے جیل حکام کی طرف سے غیر انسانی سلوک روا رکھے جانے کا مشاہدہ کر کے ان پر پابندی لگانے کا مطالبہ کیا ۔ ۔