دوما میں کیمیائی ہتھیاروںبارے تحقیقات مکمل،ذمہ داری اسد ی حکومت پر عائد کی جاتی ہے،روس

معائنہ کاروں نے نمونے حاصل کر لیے،جلد ہی رپورٹ مرتب کریںگے، ترجمان وزارت دفاع

ہفتہ مئی 15:10

ماسکو(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) روسی حکومت نے کہا ہے کہ کیمیائی ہتھیاروں کے روک تھام کے عالمی ادارے نے شامی شہر دوما میں چھان بین کا عمل مکمل کر لیا ہے۔دوما میں مبینہ کیمیائی حملے کی ذمہ داری شامی صدر بشار الاسد کی فورسز پر عائد کی جاتی ہے۔

(جاری ہے)

ہفتہ کو ترجمان روسی وزارت دفاع کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ شامی علاقے دوما میں کیمیائی ہتھیارون کے روک تھام کے عالمی ادارے نے تحقیقات مکمل کر لیں ہیں،ان حملوں کی ذمہ داری شامی صدر بشارالا سد کی فورسز پر عائد کی جاتی ہے۔

ترجمان وزارت دفاع کے مطابق کیمیائی ہتھیاروں کے روک تھام کے ادارے (او پی سی ڈبلیو) کے معائنہ کاروں نے شامی شہر دوما میں مبینہ کیمیائی حملے کے مقام پر اپنی تحقیقات کا عمل مکمل کر لیا ہے،معائنہ کاروں نے دوما میں مذکورہ مقامات کا دورہ اور چھان بین کا عمل مکمل کر لیا ہے،معائنہ کاروں نے نمونے حاصل کر لیے ہیں اور جلد ہی رپورٹ مرتب کر لی جائیگی۔اس مبینہ کیمیائی حملے کا الزام شامی صدر پر عائد کیا جاتا ہے تاہم وہ اسے مسترد کرتے ہیں۔

متعلقہ عنوان :