آرمی چیف نی11 دہشت گردوں کی سزائے موت کی توثیق کر دی

سزا پانے والے مجرم مسلح افواج، قانون نافذ کرنے والے اداروں، مالاکنڈ یونیورسٹی، نماز جنازہ پرحملہ اور شہریوں کے قتل میں بھی ملوث ہیں،آئی ایس پی آر

ہفتہ مئی 15:10

راولپنڈی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 11 دہشت گردوں کی سزائے موت جبکہ 3 دہشت گردوں کی مختلف نوعیت کی سزاؤں میں بھی توثیق کردی۔پاک فوج کے شعبہ تعلقاتِ عامہ آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان کے مطابق دہشت گردوں کو سنگین کارروائیوں میں ملوث ہونے پر سزا دی گئی، سزا پانے والے افراد مسلح افواج، قانون نافذ کرنے والے اداروں، مالاکنڈ یونیورسٹی پر حملوں اور شہریوں کے قتل میں بھی ملوث ہیں، دہشت گردوں نے مجسٹریٹ کے سامنے خیبرپختون خوا کے صوبائی رکن اسمبلی عمران خان مہمند سمیت مجموعی طور پر 60 شہریوں کو قتل اور 36 افراد کو زخمی کرنے کااعتراف بھی کیا اور اس کے علاوہ پولیس اہلکاروں سمیت 24 سکیورٹی اہلکاروں کو قتل کرنے کا الزام تھا جبکہ انہوں نے 142 معصوم افراد کو زخمی بھی کیا۔

(جاری ہے)

آئی ایس پی آر کے مطابق سزا پانے والے دہشت گردوں میں عارف اللہ، بخت محمد، برہان الدین، محمدزیب، سلیم، عزت خان، محمد عمران، یوسف خان، شہیر خان، گل خان اور نادر خان شامل ہیں۔ جبکہ 3 دہشت گردوں کو قید کی بھی سزا سنائی گئی ہے۔ برہان الدین، شہیر خان اور گل خان نے مردان کے علاقے زرگرانو کلی میں ایک نماز جنازہ پر حملہ کیا تھا۔ اس حملے میں ممبر صوبائی اسمبلی عمران خان مہمند سمیت 30 افراد شہید اور 100 زخمی ہوئے تھے۔